بس بہت ہوگیا،پشاور میں بیٹھا مہمان اب بنی گالہ تشریف لے جائیں:امیر حیدر ہوتی

  بس بہت ہوگیا،پشاور میں بیٹھا مہمان اب بنی گالہ تشریف لے جائیں:امیر حیدر ...

  

       تخت بھائی (تحصیل رپورٹر) عوامی نشنل پارٹی کے مرکزی سینئر نائب صدر اور رکن قومی اسمبلی آمیر حیدر خان ہوتی نے کہا ہے۔کہ بس بہت ہوگء۔ پشاور میں بیٹھا  مہمان اب پشاور چھوڑ کر بنی گالہ تشریف لے جائیں۔پختونوں کو مزید اپنی سیاسی جنگ میں استعمال نہ کریں۔بندوق پختونوں کے کندھوں کی بجائے سیاسی جنگ خود کریں۔ کرسی کی جنگ میں  ایک دو ہفتے جیل جانے سے ہرگز نہ ڈریں۔اپ کے پاس تو جادو ٹوٹکے بھی میسر ہے۔پختونوں کے خلاف دیگر صوبوں کے عوام کے درمیان ہرگز نفرتیں پیدا نہ کریں۔موجودہ حکومت ارکان اسمبلی کے فنڈز اور دیگر مراعات ایک سال کے لئے بند کرکے غریب لوگوں پر بلاتاخیر خرچ کریں۔۔آمیر حیدر خان ہوتی نے کہا۔کہ کرسی جانے سے عمران خان بلکل خواص باختہ ہوکر اپنے جلسوں میں اھم قومی اداروں کو تنقید کا نشانہ بنارہے ہیں۔اقتدار جانے کو قیامت سے جوڑ رہے ہے۔ان کے کرتوتوں کی وجہ سے ھم نے پہلے کہا تھا۔کہ یہ 5سال پورا نہیں کرینگے۔انھوں نے کہا۔کہ موجودہ مہنگائی اور معاشی کیفیت آئی ایم ایف کے ساتھ سخت شرائط پر عمران خان کے زہر قاتل  معاہدہ  کا نتیجہ ہے۔جسکی سزاء اب پوری قوم بھگت رہی ہیں۔عمران خان حقائق سے پہلو تہی کررہے ہیں۔جن قوقوں نے ان کا بوجھ عوام پر زبردستی ڈالا تھا۔انھوں نے اب ھاتھ کھینچ لیے ہیں۔انھوں نے مہنگائی میں خطرناک اضافے پر تشوپش کا اظہار کرتے ہوئے موجودہ حکومت کو مشورہ دیا۔کہ وہ ارکان اسمبلی۔وزراء اور دیگر حکومتی اخراجات کم کرکے غریبوں کو بلاتاخیر ریلف دیکر معاشی کیفیت کا مردانہ وار مقابلہ کریں۔انھوں نے کہا کہ اقتدار اور کرسی ہمارے لئے کوئی معنی نہیں رکھتی۔ہم کسی کے اقتدارجنگ کا حصہ نہیں بنیگے۔ہماری جنگ غربت افلاس دور کرنے کی ہے۔اور جو کوئی بھی اسی جنگ کریں۔ھم ان کا ساتھ دینگے۔انھوں نے پختون قوم پر زور دیا۔کہ پرایہ جنگ  میں پختون قوم کی قتل عام کیا گیا۔اب ضرورت اس امر کی ہے۔کہ کرسی کی جنگ میں خود کو الگ تھلگ رکھیں۔اور اپنے بنیادی آئینی حقوق کے لئے متحد ہوکر اپنا اپنا کردار ادا کریں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -