نیشنل ہسپتال میں ربورٹ کے ذریعے تمام آپریشن کا آغاز کردیا گیا 

نیشنل ہسپتال میں ربورٹ کے ذریعے تمام آپریشن کا آغاز کردیا گیا 

  

لاہور(سٹی رپورٹر) نیشنل ہسپتال اینڈ میڈیکل سینٹر میں ربورٹ کے ذریعے جنرل سرجری، یورالوجی اور گائنی کے آپریشن کا آغاز کر دیا گیا۔ اس حوالے سے گزشتہ روز پروفیسر ڈاکٹر محمود ایاز کی زیر نگرانی نیشنل ہسپتال میں باقاعدہ افتتاحی تقریب کاانعقاد کیا گیا۔جس میں پروفیسر ڈاکٹر وارث فاروقہ، پروفیسر ڈاکٹر وسیم حیات خاں پروفیسر سمعیہ ملک گائناکالوجسٹ، پروفیسر رفیق ذکی یورالوجسٹ، پروفیسر سرور کارڈیالوجسٹ، اسسٹنٹ پروفیسر ڈاکٹر عمر وڑائچ سمیت دیگر ڈاکٹرز و سرجنز نے شرکت کی۔افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پروفیسر ڈاکٹر محمود ایاز نے کہا کہ یہ پاکستان میں اپنی طرز کا واحد پروگرام ہے۔ایس آئی یوٹی میں ربورٹ کے ذریعے صرف یورالوجی کے آپریشن کئے جاتے ہیں۔لاہور میں ربورٹیک سرجری مریضوں کی بہترین نگہداشت کو مد نظر رکھتے ہوئے سرجری کی موجودہ ٹیکنالوجی کی معراج کو چھو جانے جیسا نادر منصوبہ ہے۔ پروفیسر ڈاکٹر وارث فاروقہ، پروفیسر ڈاکٹر وسیم حیات خاں، پروفیسر ڈاکٹر سمعیہ ملک نے کہا کہ پاکستان میں پہلی مرتبہ ربورٹ کے ذریعے جنرل سرجری،یورالوجی اور گائنی کے آپریشن کا آغاز موجودہ ٹیکنالوجی کے دور احسن و پایہ داراقدام ہے اور مستقبل ہی یہی ہے۔ انہوں نے سرجیکل ٹیکنالوجی کو پاکستان لانے کا سہرا بلا شعبہ پروفیسر ڈاکٹر محمود ایاز کے سر ہے۔ ان کی خداداد تخلیقی صلاحیتوں،انتھک محنت اور بے مثال لگن سے ہم اس قابل ہوئے ہیں کہ صف اوّل کی سرجیکل ٹیکنالوجی کی مدد سے پاکستان میں مریضوں کی خدمت کر سکیں۔تقریب میں سرجری سے متعلقہ دیگر شعبہ جات کے ڈاکٹرز نے بھی شرکت کی۔

  پروفیسر ڈاکٹر رفیق ذکی، پروفیسر سرور، اسسٹنٹ پروفیسر ڈاکٹر عمر وڑائچ و دیگر نے بھی خطاب کیا۔

مزید :

کامرس -