کچہ میں آپریشن مکمل،مغوی نوجوان بازیاب،ڈاکو فرار

کچہ میں آپریشن مکمل،مغوی نوجوان بازیاب،ڈاکو فرار

  

رحیم یار خان،راجن پور،روجھان (بیورور پورٹ،نمائندہ پاکستان،ڈسٹرکٹ رپورٹر،تحصیل رپو رٹر، نا مہ نگار) راجن پور، دس روز بعد دریائی کچہ کراچی کے علاقے سے اغوا ہونے والا (بقیہ نمبر36صفحہ6پر)

مغوی نوجوان بازیاب کرالیاگیا۔ضلع رحیم یار خان اور راجن پور پولیس نے مشترکہ آپریشن کیا، مغوی نوجوان ٹرک چلاتا تھا جسے تاوان کے لیے کوٹ سبزل(رحیم یار خان)کے علاقہ سے لٹھانی گینگ نے اغوا کیا اور راجن پور کے دریائی کچہ کراچی کے علاقے میں لے آئے تفصیلات کے مطابق مورخہ27مئی2022تھانہ کوٹ سبزل رحیم یار خان کی حدود میں ٹرک ٹریلر ڈرائیور مسمی ضیا اللہ ولد مرید احمد قوم شر بلوچ کو چند نامعلوم افراد کی جانب سے اغوا کیا گیا تھا جس پر کوٹ سبزل پولیس کی جانب سے مقدمہ نمبر 362/22 کا اندراج کیا گیا تھا جس میں اغوا کی دفعات شامل کی گئی تھی۔ روجھان کچہ کے علاقہ کچہ کراچی سے لٹھانی گینگ کے ڈاکوں کی جانب سے مغوی کی بازیابی کے لیے ورثا سے تاوان کا مطالبہ کیا گیا تھا۔ڈی پی او راجن پور محمد افضل کی جانب سے واقعے کا فوری نوٹس لیتے ہوئے ڈاکوں کے خلاف آپریشن کا فیصلہ کیا گیا۔ پولیس ٹیمز اور ڈی پی او راجن پور محمد افضل کی خصوصی کاوشوں سے مغوی کا پتہ لگایا گیا مخبر اور دیگر ذرائع کی بدولت پولیس کو انفارمیشن حاصل ہوئی کہ لٹھانی گینگ کی جانب سے مغوی اس وقت کچہ کراچی کے علاقے میں لٹھانی گینگ کے قبضہ میں ہے۔ آپریشن میں رحیم یار خان اور راجن پور پولیس کی ٹیمز نے حصہ لیا۔ رحیم یار خان کی جانب سے ٹیمز کی کمانڈ محمد اسلم بلوچ ایس ایچ او کوٹ سبزل اور محمد سلیم ملک سب انسپکٹر انچارج سی آئی اے سٹاف صادق آباد کررہے تھے جبکہ راجن پور پولیس کی سربراہی ڈی ایس پی روجھان شہنشاہ چانڈیہ اور ایس ایچ او شاہوالی رانا طاہر کر رہے تھے۔ آپریشن میں ڈسٹرکٹ پولیس اور ایلیٹ فورس کی ٹیمز نے حصہ لیا آپریشن میں بکتر بند گاڑیوں اور جدید ہتھیاروں کا استعمال کیا گیا۔ آپریشن روجھان کچہ کے علاقہ کچہ کراچی جزیرے پر لٹھانی گینگ کے ڈاکوں کے خلاف کیا گیا۔ پولیس ٹیمز کی جانب سے ایک جامع حکمت عملی کے تحت شرقی اور غربی سمتوں سے جزیرے کی جانب پیش قدمی کا آغاز کیا گیا۔ آپریشن کے پہلے فیز میں پولیس ٹیمز کی جانب سے مغربی سمت سے پیش قدمی کی گئی جس کے نتیجے میں پولیس اور ڈاکووں کے درمیان بھاری فائرنگ کا تبادلہ ہوا۔ دوسرے فیز میں جزیرے کے مشرقی سمت سے پولیس ٹیمز کی جانب سے پیش قدمی کا آغاز کیا گیا اور پولیس کی بھاری نفری اور شدید فائرنگ کی وجہ سے ڈاکو مغوی اور جزیرے کو چھوڑ بھاگ نکلنے میں کامیاب ہوئے اور پولیس مغوی کو بحفاظت بازیاب کرانے میں کامیاب ہوئی۔ پولیس کی جانب سے مغوی کو بحفاظت ورثا کے حوالے کر دیا گیا۔ اس موقع پر ڈی پی او راجن پور کا کہنا تھا کہ راجن پور پولیس خصوصا  روجھان پولیس ڈاکوں اور جرائم پیشہ افراد کا قلع قمع کرنے کے لیے ہمہ وقت تیار ہے۔ روجھان پولیس کچہ کے علاقہ کو امن کا گہوارہ بنانے اور شر پسند عناصر ڈاکوں سے پاک کرنے کے لیے دن رات کوشاں ہے۔ پولیس نے کچہ کے بیشتر علاقوں میں ڈاکوں کے محفوظ پناہ گاہوں کو تباہ کردیا ہے کچہ کا علاقہ جو سابقہ ادوار میں نوگوایر یا تصویر کیا جاتا تھا اب ان علاقوں میں پولیس کی رٹ قائم ہوچکی ہے۔ ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر کی جانب سے کامیاب پولیس آپریشن کے بعد مغوی کی بازیابی پر آپریشن میں حصہ بننے والے پولیس آفیسران میں تعریفی اسناد اور کیش انعامات تقسیم کیے گئے ہیں۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -