سانحہ عباس ٹاﺅن میں ملوث دہشتگرد پکڑنے کیلئے حساس اداروں کو48گھنٹے دیتے ہیں،رحمن ملک

سانحہ عباس ٹاﺅن میں ملوث دہشتگرد پکڑنے کیلئے حساس اداروں کو48گھنٹے دیتے ...

کراچی (آئی این پی) وفاقی وزیر داخلہ سینیٹر رحمن ملک نے کہا ہے کہ میں نے حساس اداروں کو سانحہ عباس ٹاﺅن میں ملوث دہشت گرد پکڑنے کے لئے 48 گھنٹے دیئے ہیں، لشکر جھنگوی نے کوئٹہ کے بعد کراچی کو اپنا نشانہ بنایا ہے، ہماری کامیاب حکمت عملی سے لشکر جھنگوی کی کمر ٹوٹ چکی ہے، طالبان کمزور ہونے کے بعد مذاکرات کا کہہ رہے ہیں، شیعہ برادری کی آفرین ہے اور میں ان کو سلام پیش کرتا ہوں جنہوں نے صبر وتحمل کا مظاہرہ کیا اور یہ ان کا قوم پر بہت بڑا احسان ہے۔ وہ پیر کو یہاں صحافیوں سے بات چیت کررہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ میں سمجھتا ہوں جس طرح شیعہ برادری نے تحمل سے کام لیا ہے میں ان کے بچے سے لے کر بڑے تک کو سلام پیش کرتا ہوں کیونکہ جس صبر کا شیعہ برادری نے مظاہرہ کیا ہوا ہے قوم پر ان کا بڑا احسان ہے۔ وزیر داخلہ نے کہا کہ دشمن کا ارادہ تھا کہ شیعوں کو شہید کرکے ملک میں فسادات اور خون ریزی شروع ہوجائے گی لیکن وہ اپنے ناجائز مقاصد میں کامیاب نہیں ہوئے، رحمن ملک نے کہا کہ اب قوم جاگ اٹھی ہے اور ملک کا بچہ بچہ جانتا ہے کہ ہمیں آپس میں لڑانے کی کوشش کی جارہی ہے، وزیر داخلہ نے ایک سوال کے جواب میں صحافی سے کہا کہ دھماکے کرنے والوں کی شکلیں آپ کے اور میرے جیسے ہوتی ہیں اور آپ جیسے ہی انہوں نے بیگ اٹھائے ہوئے ہیں اس میں کوئی باہر کا بندہ ملوث نہیں، انہوں نے کہا کہ میں نے اسلام آباد چار سال سے جو نظام لاگو کیا ہوا ہے اس کے تحت آج تک کوئی دہشت گرد کارروائی نہیں ہوئی۔

رحمن ملک

مزید : صفحہ اول