سعودی حکومت نے منٰی میں مکتبتومیں وی آئی پی کلچر ختم کرنے کا فیصلہ کرلیا

سعودی حکومت نے منٰی میں مکتبتومیں وی آئی پی کلچر ختم کرنے کا فیصلہ کرلیا

لاہور (میاں اشفاق انجم سے) سعودی حکومت نے معلمین اور مکتب کا نیا نظام لانے کا فیصلہ کر لیا۔ منیٰ میں مکتبوں میں وی آئی پی کلچر ختم کرنے کا فیصلہ کر لیا۔ سعودی وزیر حج نے معلمین کو مکتب کی الاٹمنٹ کے خفیہ ٹینڈر کے لئے12جمادی الاول کی تاریخ مقرر کر دی۔ مکتبوں کو پانچ کیٹگری میں تقسیم کرتے ہوئے قیمتوں کا بھی تعین کر دیا گیا۔12جمادی الاول کو ہونے والی نیلامی میں کوئی بھی معلم کوئی بھی مکتب خرید سکے گا۔ قوائد ضوابط وزارت الحج نے فائنل کر لئے۔ خیمہ4X4 فٹ ہو گا۔1سے8تک کے مکتب اے کیٹگری پر مشتمل ہوں گے۔ معلم4X4 کے خیمے میں10افراد رکھ سکے گا۔ صوفہ کم بیڈ کے ساتھ کھانا بھی معلم کی ذمہ داری ہو گی۔ ایک سے آٹھ مکتب تک کی قیمت2500ریال فی حاجی ہو گی۔ ایک سے آٹھ مکتب آمنے سامنے ایک ترتیب کے ساتھ ہوںگے۔ ترتیب جمرات شیطانوں کی طرف سے شروع ہو گی۔10سے اوپر افراد نہیں رکھے جا سکیں گے، تمام دیگر سروسز بھی معلم کی ذمہ داری ہو گی۔ مکتب9سے35بی(B) کیٹگری ہو گی۔ مکتب کی قیمت1600ریال فی کس حاجی ہو گی۔16آدمی میٹرس کے ساتھ رکھیں جا سکیں گے۔ کھانا بھی معلم کے ذمہ ہو گا۔Bکیٹگری میں صوفہ کم بیڈ نہیں لگ سکیں گے، بلکہ میٹرس استعمال ہوں گے، ان کا سائز بھی وزارت حج دے گی۔16افراد سے زائد افراد رکھنے پر سختی سے پابندی ہو گی۔ 36سے75مکتب نمبر سی کیٹگری کہلائے گی، ان مکتب کی قیمت1100ریال فی حاجی ہو گی،روٹی معلم کے ذمہ ہو گی،16آدمی ٹھہر سکیں گے۔ صوفہ کم بیڈ اور میٹرس کی بجائے عام گدا استعمال ہو گا اس کا سائز بھی وزارت دے گی۔16افراد سے اوپر افراد نہیں ٹھہرا سکیں گے۔75سے95تک مکتب ڈی کیٹگری کہلائے گی،650ریال قیمت ہو گی، روٹی معلم کے ذمہ نہیں ہوگی۔16افراد ٹھہر سکیں گے۔96سے اوپر کے مکتبEکیٹگری تصور ہو گی اس کی قیمت450ریال ہو گی۔ اس میں بھی16افراد ٹھہر سکیں گے، روٹی شامل نہیں ہو گی۔ ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ گزشتہ سال تک کام کرنے والے معلمین نے عدالت سے رجوع کر رکھا تھا۔ چیئرمین موسسہ جنوبی ایشیائ، عدنان امین کاتب نے معذرت کرتے ہوئے آئندہ کام نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے، نئے چیئرمین موسسہ جنوب اشیاءرافعت بدر نے ذمہ داری سنبھالنے کے بعد سعودی وزیر حج بندر بن الحجاز کی ہدایت پر مکتبوں کے نئے نظام کو حتمی شکل دے دی ہے۔ تمام معلمین نے تین تین افراد پر مشتمل کمیٹی تشکیل دے کر رجسٹریشن کروا لی ہے۔ سعودی حکومت نے منیٰ میں وی آئی کلچر کے خاتمے کے لئے عملی اقدامات کرتے ہوئے پانچ کیٹگری کی تقسیم کی ہے۔ پاکستانی مکتبوں میں امارات وغیرہ کے حاجی نہیں رہ سکیں گے۔ اٹیچ باتھ وغیرہ کمروں کے ساتھ بنانے پر پابندی لگا دی ہے۔ اے کیٹگری میں اضافی خیمہ خرید کر آر گنائزر ساتھ نہیں بنا سکیں گے۔ اس کے لئے پہلے اجازت لینا ہو گی۔ یہ بھی معلوم ہوا ہے نئے نظام میں مکتبوں کی ترتیب نئے سرے سے بنائی گئی ہے۔ ابھی تک کسی کا مکتب فائنل نہیں ہوا۔ 23-24مارچ سے پہلے تمام کام تیزی سے مکمل کیا جا رہا ہے۔12جمادی الاول کے بعد نیلام کے ذریعے جو مکتب معلمین سنبھالیں گے۔ اس کے بعد سعودی تعلیمات کے مطابق کیٹگری کے حساب سے انتظامات کرنے کے پابند ہوں گے۔

مزید : صفحہ آخر