نتن یاہو کوئی قابل عمل متبادل دینے میں ناکام رہے ٗامریکی صدر اوباما

نتن یاہو کوئی قابل عمل متبادل دینے میں ناکام رہے ٗامریکی صدر اوباما

  

 واشنگٹن (این این آئی)امریکہ کے صدر براک اوباما نے کہاہے کہ اسرائیلی وزیراعظم بنیامن نتن یاہو امریکی کانگریس سے اپنے خطاب میں ایران کو جوہری ہتھیاروں کے حصول سے روکنے کیلئے کوئی قابل عمل متبادل نہیں دے پائے ہیں۔ اسرائیلی وزیر اعظم نیتن یاہو کے امریکی گانگریس میں خطاب پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے صدر اوباما نے اسرائیلی وزیر اعظم کی اس تنبیہ کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان کی تقریر میں کوئی نئی بات نہیں تھی امریکی صدر نے کہا کہ مجھے ان کی تقریر سننے کا موقع نہیں ملا تاہم اس کا متن دیکھنے کا موقع ملا جہاں تک میں بتا سکتا ہوں وہ یہ ہے کہ اس میں کوئی نئی بات نہیں تھی۔امریکی صدر اوباما نے کہا کہ وہ نتن یاہو کے اس بیان سے اتفاق کرتے ہیں کہ اسرائیل اور امریکہ کا تعلق ٹوٹ نہیں سکتا اور اس پر بھی کہ خطے میں ایران کی سرگرمیاں امریکہ اور اسرائیل کے مفادات کے خلاف ہیں۔امریکی صدر نے کہاکہ اس سے کوئی بھی اختلاف نہیں کر سکتا کہ ایران مسلسل بنیادوں پر اسرائیل کو دھمکیاں اور یہود مخالف بیانات دیتا ہے تاہم بنیادی مسئلہ کہ ہم ایران کو کیمیائی ہتھیاروں کے حصول سے کیسے روک سکتے ہیں جو اسے خطے میں کاروائیاں کرنے کا موقع فراہم کرنے کیلئے بہت زیادہ خطرناک بنا سکتا ہے کیلئے وزیراعظم نے کسی بھی قابل عمل متبادل کی پیشکش نہیں کی۔

مزید :

عالمی منظر -