بھارت ٗدہلی ریپ پر مبنی فلم کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا

بھارت ٗدہلی ریپ پر مبنی فلم کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا

  

 نئی دہلی (این این آئی)بھارتی دارالحکومت دہلی کی ایک چلتی بس میں دو سال قبل ہونے والے ریپ کیس کے مجرموں سے بات چیت پر مبنی دستاویزی فلم کے خلاف دہلی میں ایف آئی آر درج کی گئی انڈیاز ڈاٹر‘ نامی یہ دستاویزی فلم بی بی سی کیلئے بنائی گئی تھی جس میں ریپ کے مجرم مکیش سنگھ سمیت دہلی میں 16 دسمبر 2012 کو ایک 23 سالہ میڈیکل طالبہ کے ساتھ ہونے والے اجتماعی ریپ کے دیگر قصورواروں سے بات چیت کی گئی۔واقعہ کو ’نربھیا‘ معاملہ کہا گیا جس میں ایک طالبہ کا گینگ ریپ کیا گیا تھا اور وہ زخموں کی تاب نہ لا سکی تھی۔نربھیا ہندی کا لفظ ہے جس کا مطلب بے خوف ہوتا ہے اور حادثے کا شکار لڑکی کو بھارتی میڈیا میں یہ نام دیا گیا تھا۔دہلی پولیس کمشنر بی ایس بسسی نے صحافیوں کو بتایا کہ میڈیا میں آنے والی رپورٹوں سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ فلم میں ’نربھیا‘ کے بارے میں بعض ایسی باتیں سامنے آئی ہیں جن سے قانون کی خلاف ورزی ہوتی ہے بسسی نے کہا: ’ہم نے تعزیرات ہند کی دفعہ 504، 1۔505 (بی)، 509 اور آئی ٹی ایکٹ کی دفعہ 66 ۔ اے کے تحت ایف آئی آر درج کی ہم اس کی رونمائی پر روک لگانے کے مطالبے کے لیے عدالت بھی جائیں گے۔مکیش سنگھ نے کہا کہ عصمت دری کے لیے مردوں سے زیادہ خواتین ذمہ دار ہیں۔فلم کے شریک پروڈیوسر اور سینئر صحافی دیبانگ نے بات چیت میں کہا کہ اگر اس فلم کی نمائش پر پابندی لگائی جاتی ہے تو یہ اظہار کی آزادی کیلئے غلط ہوگا۔

مزید :

عالمی منظر -