مراد سعید 3 پرچوں میں فیل، پھر ایک گھنٹے میں ہی تینوں پاس کرلئے

مراد سعید 3 پرچوں میں فیل، پھر ایک گھنٹے میں ہی تینوں پاس کرلئے
مراد سعید 3 پرچوں میں فیل، پھر ایک گھنٹے میں ہی تینوں پاس کرلئے

  

پشاور (ویب ڈیسک) تحریک انصاف کے خود کو گولڈ میڈلسٹ کہنے والے ممبر قومی اسمبلی مراد سعید پشاور یونیورسٹی کے انوائرمنٹل سائنسز کے تین پرچوں میں فیل نکلے، دو دن کے اندر دوبارہ پرچے دینے اور 60 فیصد سے زائد نمبر حاصل کر کے پاس ہونے کے انکشاف کے بعد پشاور یونیورسٹی کے وائس چانسلر کی جانب سے نتائج روک کر تین رکنی انکوائری بورڈ تشکیل دے کر تحقیقات شروع کردی گئیں۔مقامی اخبار روزنامہ ایکسپریس کے مطابق انہوں نے پشاور یونیورسٹی کے انوائرمینٹل سائنسز سے بی ایس میں گولڈ میڈل حاصل کیا ہوا ہے، چند روز قبل مراد سعید کی جانب سے بی ایس انوائرمنٹل سائنس کی ڈگری حاصل کرنے کی درخواست جمع کی گئی جس پر انہیں معلوم ہوا کہ انہوں نے رولز کے مطابق 131 گریڈ اوور پورے نہیں کئے بلکہ بی ایس سمسٹر 6,5 اور 7 کے تین پرچوں میں بھی فیل ہیں لہٰذا انہیں ڈگری نہیں دی جاسکتی بلکہ انہیں دوبارہ سے تینوں پرچے دینا ہوں گے جس کیلئے 2 مارچ کو ان کیلئے دوبارہ امتحان کا اہتمام کیا گیا۔ انہوں نے پرچے 1 گھنٹے کے اندر حل کئے جس کے بعد 3 مارچ 2015ءکو ان کا رزلٹ بھی جاری کردیا گیا جس میں انہیں 60 فیصد سے زائد مارکس لیتے ہوئے کامیاب قرار دیا گیا۔ یونیورسٹی کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر نے بتایا کہ وائس چانسلر ڈاکٹر رسول جان نے سخت نوٹس لیتے ہوئے تحقیقات کیلئے تین رکنی کمیٹی تشکیل دی اور رزلٹ روک لیا گیا ہے۔ مراد سعید کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ پروفیسروں کے آپسی جھگڑوں کی وجہ سے انھیں ڈگری جاری نہیں ہو سکیاور وہ اس حوالے سے قانونی چارہ جوئی کا ارادہ رکھتے ہیں.

مزید : پشاور