چین نے بحر ہند کی تہہ سے قیمتی دھاتیں اور عناصر حاصل کرلئے

چین نے بحر ہند کی تہہ سے قیمتی دھاتیں اور عناصر حاصل کرلئے

بیجنگ(آن لائن)چین نے بحر ہند میں بھارتی سمندری حدود کے قریب سمندر کی تہہ میں کھدائی کرکے قیمتی دھاتیں اور عناصر نکالنے کا کام شروع کر دیا ہے۔ اپنی سمندری حدود کے قریب اس طرح کی سرگرمیوں نے بھارت کو پریشان کر دیا ہے۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق چین کی زیر آب کھدائی کرنے والی میشن بحر ہند کے شمال مغربی علاقے میں 3117 میٹر کی گہرائی میں کھدائی کر رہی ہے۔ مشن کے فیلڈ کمانڈر یو ہونگ جون کا کہنا ہے کہ کھدائی کے نتیجے میں مختلف اقسام کے قیمتی عناصر جیسا کہ 4.2 کلوگرام سلفائیڈ، 18.7 کلوگرام بیسالٹ اور 16 لٹر گہرے سمندر کا پانی نکالے ہیں اور ساتھ ہی زیر آب کھدائی کرنے والی مشین کے مختلف سسٹمز کا بھی جائزہ لیا ہے۔

اس مہم مین شامل ایک سائنسدان ہان ڑی کیو کا کہنا ہے کہ اس مہم کے بعد آئندہ مہمات میں علاقے میں پائی جانے والی قیمتی دھاتوں اور عناصر کے متعلق ایک وسیع پلان کے ساتھ تلاش کا کام کیا جائے گا۔واضح رہے کہ ہان ڑی کیو سمندر کی سب سے گہرے مقام ماریانا ٹرینچ تک جا چکے ہیں۔ چین نے سمندر کی گہرائی تک رسائی کی ٹیکنالوجی حاصل کر لی ہے جس کے بعد امکانات ظاہر کیے جا رہے ہیں کہ جلد ہی چین سمندروں کی گہرائیوں میں قیمتی عناصر اور دھاتوں کی تلاش کا کام شروع کر دے گا۔ چین پہلے ہی بین الاقوامی سمندری حدود میں 2011ء4 میں کھدائی کا کنٹریکٹ حاصل کر چکا ہے ۔

مزید : کامرس

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...