چارسدہ میں تاجروں کا پولیس رویہ کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

چارسدہ میں تاجروں کا پولیس رویہ کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

چارسدہ (بیورو رپورٹ) پولیس گردی کے خلاف تاجر سڑکوں پر نکل آئے ۔ جنگل کا قانون کسی صورت قبول نہیں۔ چارسدہ پولیس شریف لوگوں کو مجرم اور خطرناک مجرموں کو شریف بنانے میں ثانی نہیں رکھتی ۔قانون کے رکھوالے خود قانون شکن بن چکے ہیں۔ جنگل کا قانون ختم نہ کیا گیا تو دمام مست قلندر ہو گا۔ افتخار حسین صراف ۔ تفصیلات کے مطابق سردریاب بازار کے چوکیدار جانس خان کی غیر قانونی اور بلا جواز گرفتاری کے خلاف تاجر اتحاد کے زیر اہتمام سردریاب میں ایک بڑا احتجاجی مظاہرہ کیا گیا ۔احتجاجی مظاہرے کے دوران ٹریفک کا نظام درہم برہم رہا ۔ احتجاجی مظاہرے خطاب کرتے ہوئے تاجر اتحاد کے مرکزی صدر افتحار حسین صراف ، چےئرمین لعل محمد لعل اور جان محمد نے کہا کہ پولیس نے سردریاب بازار کے چوکیدار کو گزشتہ تین دن سے غیر قانونی طور پر حراست میں لیا ہے ۔ تین دن سے ان کے خلاف مقدمہ درج کیا جا رہا ہے اور نہ ان کو عدالت میں پیش کیا جا رہا ہے جو قانون اور آئین کے خلاف ہے ۔ مقررین نے کہاکہ گزشتہ تین روز سے پولیس مختلف خیلے بہانوں سے تاجروں کو دھوکہ دے رہی ہے۔انہوں نے کہاکہ چارسدہ میں جنگل کا قانون ہے اور چارسدہ پولیس شیر بن کر جنگل کا بادشاہ بنا ہو ا ہے ۔انہوں نے کہاکہ پولیس کے کر توتوں کو ہم خوب سمجھتے ہیں اگرقانون کے رکھوالے قانون شکنی سے باز نہ آئے تو تاجر برادری تمام شاہراہوں کو بند کریگی جس کی تمام ذمہ داری پولیس پر عائد ہو گی ۔ بعد ازاں ایس ایچ او پڑانگ گل شید خان نے مظاہرین سے مذاکرات کئے جس کے بعد مظاہرین پر امن طور پر منتشر ہو گئے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...