انسانی سمگلروں کا سادہ لوح شہریوں کو غیر قانونی طور پر بیرون ملک بھجوانے کا دھندہ عروج پر

انسانی سمگلروں کا سادہ لوح شہریوں کو غیر قانونی طور پر بیرون ملک بھجوانے کا ...

  



پشاور( سٹی رپورٹر)صوبائی دارالحکومت پشاور میں انسانی سمگلروں نے معصوم اور سادہ لوح شہریوں کو مستقبل کے سنہرے خواب دکھا کر اپنے جال میں پھنسانے کے بعد غیر قانونی طریقے سے بیرون ممالک بھیجوانے کا سلسلہ شروع کر رکھا ہے ۔ انسانی سمگلروں کے خلاف ذمہ داران کی خاموشی سوالیہ نشان بن گئی ، درجنوں نوجوان زندگی بھر کی جمع پونجی لٹا بیٹھے ،زرائع کے مطابق شہرو گردونواح میں بڑی تعداد میں انسانی سمگلر اور ایجنٹوں نے لوٹ مار مچا رکھی ہے، معصوم شہریوں کو یورپین ممالک کے سہانے سپنے دکھا کر جال میں پھنسا کر عمر بھر کی جمع پونجی سے محروم کردیا جاتا ہے ، بااثر ایجنٹ شہریوں کو اٹلی، ناروے، انگلینڈ،ا سپین سمیت دیگر یورپین ممالک کا جھانسہ دیکرایران ، عراق کے پہاڑی راستوں کے زریعے یونان پہنچاتے ہیں جہاں پر پہلے سے موجود ایجنٹ نوجوانوں کو لاکھوں روپے میں خرید کر ان پر وحشیانہ تشدد کرکے ان کے گھروں سے مزید لاکھوں روپے منگواتے ہیں ،اس طرح غیرقانونی طریقوں سے بیرون ممالک بھیجوا کر مال بٹورنا شروع کر رکھا ہے ۔ غیرقانونی طریقے سے باہر بھیجوانے والے انسانی سمگلروں نے وسیع پیمانے پر نیٹ ورک قائم کر رکھے ہیں شہریوں نے بتایا کہ نسانی سمگلروں نے شہر سمیت مضافاتی علاقوں میں مضبوط اڈے قائم کر رکھے ہیں جہاں سادہ لوح نوجوانوں کو سہانے سپنے دکھا کر انہیں غیر قانونی طریقے سے بیرون ملک بھجوانے کے نام پر لاکھوں بٹور کر شہریوں کو کنگال کیا جارہاہے ، ضلع بھر کی عوامی سماجی، رفاعی ، فلاحی تنظیموں کے عمائدین نے ڈی جی ایف آئی اے اور متعلقہ اداروں کے ذمہ داران سے مطالبہ کیا ہے کہ پشاور میں اس وقت انسانی سمگلروں اور ان ایجنٹوں کا نیٹ ورک موجود ہے جس کے سبب ایجنٹ گلی محلوں تک پھیلے ہوئے ہیں اور معصوم شہریوں کو مالی وجانی نقصان پہنچا رہے ہیں اس نیٹ ورک کا مکمل توڑ کر کے ان ایجنٹوں کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...