یوسی چیئرمینوں کا یوٹرن ‘ فرضی بلوں کے ذریعے فنڈز ہضم کرنیکا انکشاف

یوسی چیئرمینوں کا یوٹرن ‘ فرضی بلوں کے ذریعے فنڈز ہضم کرنیکا انکشاف

  



جتوئی ( نامہ نگار)ضلع مظفر گڑھ کی چار تحصیلوں کی 110یونین کونسلوں میں چیئر مینوں کے ہاتھوں کروڑوں روپے کے فنڈز ہڑپ کیئے جانے کا انکشاف۔ہر یونین کونسل کو(بقیہ نمبر43صفحہ7پر )

8لاکھ سے 50لاکھ روپے تک کے فنڈ جاری ہوئے۔متعدد وائس چیئر مینوں نے نام شائع نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ مالی سال 2017۔2018میں ضلع کونسل مظفر گڑھ کی 110 یونین کونسلوں میں فی یونین کونسل 8لاکھ روپے سے 50لاکھ روپے تک فنڈز جاری کیئے گئے چیئر مینو ں نے بغیر اجلاس بلائے آر سی سی پائپ سلائی مشینیں اور نلکہ جات کے ٹینڈر شائع تو کیئے مگر کروڑوں روپے کے فنڈ ز فرضی بلوں سے ہضم کر لیئے گئے بعض یونین کونسلوں کے چیئر مینوں نے دکھا وے کے لیئے کم مقدار میں نلکے اور سلائی مشینیں اور آر سی سی پائپ خرید کر من پسند نوکروں اور چہیتوں میں تقسیم کر دیئے جس کی ممبران کو ہوا تک نہ لگنے دی۔ سیکرٹری یونین کونسلوں نے بھی اس لوٹ مار میں خوب ہاتھ رنگے ہر یونین کونسل کی تزئین و آرائش کے لیئے ایک لاکھ روپے کے فنڈز دیئے گئے جو انہوں نے دکھاوے کے طور پر تھوڑی سی رقم خرچ کی باقی سب ہضم کر لیئے گئے کیونکہ اکثر ممبران ان پڑھ اور انگوٹھا چھاپ ہیں جبکہ وائس چیئر مینوں کا وجود صرف خانہ پری کیلیے ہے کئی ایسی یونین کونسلوں کی وا ٹ واش پر خرچ کر دیا گیا ہے جن یونین کونسلوں کی اپنی عمارت بھی نہ ہے عوامی سماجی حلقوں نے ڈی سی مظفر گڑھ ،کمشنر ڈیرہ غازی خان سے مطالبہ کیا ہے کہ اس بڑے کرپشن کے خلاف سخت سے سخت نوٹس لیا جائے۔

فنڈز ہضم

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...