ایف بی آر ‘ ٹیکس نیٹ میں شامل ہونیوالے شہریوں پر نئی پابندیاں

ایف بی آر ‘ ٹیکس نیٹ میں شامل ہونیوالے شہریوں پر نئی پابندیاں

  



وہاڑی(بیورورپورٹ+نمائندہ خصوصی)ایف بی آرنے نئے فیصلہ سے ٹیکس نیٹ ورک میں نئے شامل ہونیوالے شہریوں پر پابندی، تفصیل کے مطابق ایف بی آر نے گزشتہ سال2018 کے گوشواروں کی آخری تاریخ کا علان کرتے ہوئے کہا تھا کہ جو مقررہ تاریخ پر اپنے گوشوارے جمع نہیں کروائے(بقیہ نمبر38صفحہ12پر )

گا وہ اگلا پورا سال نان فائیلر رہے گا 15دسمبر تک جن فائیلر اور نان فائیلر شہریوں نے اپنے گوشوارے جمع کرائے وہ فائیلربن گئے باقی اب کوشش کے باوجود بھی نان فائیلر رہیں گے اور ان کو ایک سال کا طویل انتظار کرنا ہوگا جبکہ اس سے پہلے سال بھر شہریوں کو ٹیکس گزار بننے کی سہولت میسرتھی ہر سوموار کو ایف بی آر نئے ٹیکس گزاروں کی لسٹ اپ ڈیٹ کرنے بعد جاری کر تی تھی اور شہری سال بھر مستفید ہوتے تھے شہریوں انورعلی،نعمان،حیدر،اسلم ودیگر نے وزیر اعظم عمران خان سے فوری نوٹس لے کر فیصلہ پر نظر ثانی کی درخواست کی ہے اس سلسلہ میں نائب صدر پاکستان ٹیکس ایڈوائزرز ایسوسی ایشن وسیم اشرف نے صحافیوں سے گفتگو کر تے ہوئے کہا کہ ایف بی آر کے نئے فیصلہ سے جہاں شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے وہیں حکومت کو ریونیو میں کمی کا سامنا ہوگاکیونکہ حکومت کی طرف سے فائیلر کو ملنے والی سہولت سے شہریوں کو فائدہ اٹھانے کے لئے اب ایک سال کا انتظار کرنا ہوگا اور اس طر ح نئے کاروبار کرنے والے شہریوں کو بھی شدید مشکلات کا سامنا کر نا پڑ رہا ہے انہوں نے کہا کہ ایف بی آر کا یہ فیصلہ ٹیکس نیٹ ورک میں شامل ہونے والے افراد کی حوصلہ افزائی کی بجائے حوصلہ شکنی کا باعث بن رہاہے جس کا نقصان حکومت کوہوگا انہوں نے کہا کہ اس ساری صورتحال سے ہماری ایسوسی ایشن نے ایف بی آر کو باقاعدہ آگاہ بھی کیا تھا لیکن تاحال اس پر کونظر ثانی نہیں کی گئی۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...