مظفر گڑھ :ترقیاتی فنڈز ہڑپ کرنیکی تیاریاں منصوبہ فائنل

مظفر گڑھ :ترقیاتی فنڈز ہڑپ کرنیکی تیاریاں منصوبہ فائنل

  



مظفرگڑھ‘جتوئی(نامہ نگار) تحریک انصاف کے ممبران اسمبلی کے حلقوں میں ترقیاتی کاموں کے لیے آنیوالے 80 کروڑ روپے سے زائد فنڈز کو کرپشن کی نذر کرنے کے لیے محکمہ لوکل گورنمنٹ مظفرگڑھ کے افسران بھیانک منصوبہ بنالیا، تحریک انصاف کے مظفرگڑھ سے تعلق رکھنے والے(بقیہ نمبر16صفحہ12پر )

دس ایم پی ایز کو انکے حلقے کے 70 ترقیاتی منصوبوں میں 10 فیصد کمیشن دیا جائیگا، لوکل گورنمنٹ کے ایس ڈی او نے حکومت کو مالی فائدہ پہنچانے کے لیے رجسٹریشن کرانے والے درجوں ٹھیکیداروں کی فائلیں جان بوجھ کر روک لیں، 8 مارچ کو ہونیوالے ٹینڈرز میں ممبران اسمبلی کے چہیتے ٹھیکیداروں کو نوازنے کے لیے انکی رجسٹریشن کا عمل جاری، متاثرہ ٹھیکیدار ڈپٹی کمشنر مظفرگڑھ کی کھلی کچہری میں پھٹ پڑے تفصیل کے مطابق پنجاب حکومت نے تحریک انصاف سے تعلق رکھنے والے ممبران اسمبلی کو اپنے اپنے حلقوں میں ترقیاتی کام کروانے کے لیے 10 ، 10 کروڑ روپے کے فنڈز فراہم کیے ہیں جس کے تحت ضلع مظفرگڑھ سے تعلق رکھنے والے 10 ممبران اسمبلی کو 80 کروڑ روپے سے زائد رقم کے 70 منصوبوں کے لیے محکمہ لوکل گورنمنٹ مظفرگڑھ کو فنڈز فراہم کردئیے ہیں جس کے لیے 8 مارچ کو ٹینڈز طلب کیے گئے ہیں۔ محکمہ لوکل گورنمنٹ کے ایس ڈی او اللہ وسایا نے ترقیاتی کاموں کے لیے آنیوالی اس بڑی رقم کو کرپشن کی نذر کرنے کے لیے کرپشن کا بھیانک منصوبہ بنایا ہے جو تحریک انصاف کی حکومت، ضلعی انتظامیہ اور اینٹی کرپشن کی موجودگی میں ایک بڑا چیلنج ہے اور محکمہ لوکل گورنمنٹ کے ایس ڈی او نے 8 مارچ کو ہونیوالے ٹینڈرز میں مقابلہ کراکر حکومت کو مالی فائدہ پہنچانے کی بجائے جان بوجھ کر ممبران اسمبلی کے چہیتے ٹھیکیداروں کی رجسٹریشن کا عمل شروع کر رکھا ہے تاکہ ان ٹھیکیداروں کے درمیان پول کراکر انہی کو ٹینڈرز کے منصوبوں کے کام دے دئیے جائیں اور ہر ممبران اسمبلی کو انکے فنڈز کے مطابق 10 فیصد کمیشن دیا جاسکے جبکہ ایس ڈی او اللہ وسایا نے جان بوجھ کر درجنوں ٹھیکیداروں کی رجسٹریشن کی فائلیں بھی روک رکھی ہیں تاکہ وہ ان ٹینڈرز میں حصہ نہ لے سکیں کیونکہ فائلیں روکے جانیوالے ٹھیکیدار پول کرانے کی بجائے اوپن ٹینڈرز مقابلہ کراکر حکومت کو فائدہ پہنچانا چاہتے ہیں جس لوکل گورنمنٹ کے افسران اور ممبران اسمبلی کے کروڑوں روپے کا کمیشن ضائع ہونے کا خدشہ ہے جس کی وجہ سے کرپشن کے بھیانک منصوبہ کا مرکزی کردار ایس ڈی او اللہ وسایا ہر صورت میں پول کرانے کے لیے متحرک ہے اور ممبران اسمبلی اور ٹھیکیداروں کے درمیان ڈیل کرانے کے لیے بھرپور کردار ادا کررہا ہے۔ ذرائع نے یہ انکشاف کیا ہے کہ تحریک انصاف کے ایک ایم پی اے نیاز خان گشگوری نے محکمہ لوکل گورنمنٹ کے افسران کی طرف سے فنڈز کے بدلے کمیشن دینے کی آفر کو ٹھکرا دیا تھا جس پر انہوں نے اپنے فنڈز محکمہ لوکل گورنمنٹ کے کرپٹ افسران اور ٹھیکیدار مافیا سے بچاکر محکمہ پبلک ہیلتھ انجئیرنگ میں منتقل کرالیے ہیں جہاں انکے منصوبے کے ٹینڈرز ہونگے۔ جبکہ ڈپٹی کمشنر مظفرگڑھ کی طرف سے ضلع کونسل مظفرگڑھ کے ہال میں منعقد کی جانیوالی کھلی کچہری میں بھی محکمہ لوکل گورنمنٹ کے کرپٹ افسران کے خلاف متاثرہ ٹھیکیدار پھٹ پڑے اور بلاوجہ اعتراضات لگاکر ٹھیکیداروں کی رجسٹریشن نہ کرنے پر تحریری درخواست بھی جمع کرادی ہے لیکن تاحال محکمہ لوکل گورنمنٹ کا ایس ڈی او اللہ وسایا نے ٹینڈر فارم بھی اپنے پاس رکھے ہوئے ہیں جو جان بوجھ کر دفتر سے بھی غائب ہے۔ دلچسپ امر یہ بھی ہے کہ محکمہ لوکل گورنمنٹ کے دفتر سے چند گز کے فاصلہ پر محکمہ انٹی کرپشن کا دفتر بھی واقع ہے جن کے افسران کو بھی اس بڑے سکینڈل کے بارے میں معلومات ہونے کے باوجود تاحال خاموشی اختیار کیے ہوئے ہیں۔

ٹینڈر پول

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...