مودی انتخابی بخار میں ہوش و حواس کھو چکے ہیں،خرم نواز گنڈا پور

مودی انتخابی بخار میں ہوش و حواس کھو چکے ہیں،خرم نواز گنڈا پور

  



لاہور(نمائندہ خصوصی )عوامی تحریک کے سیکرٹری جنرل خرم نواز گنڈاپور نے کہا ہے کہ بھارت اسرائیل کی کٹھ پتلی بن کر خطے میں ترقی اور امن کو سبوتاژ کرنے سے باز رہے، نریندر مودی کے دور میں بھارت غیر ملکی ڈکٹیشن لینے والا ایک طفیلی ملک بن چکا ہے ،نریندر مودی انتخابی بخار میں ہوش و حواس کھو چکے ہیں۔،بھارتی وزیر خارجہ سشماسوراج کی طرف سے کشمیر پر منظور کی جانے والی او آئی سی کی قرارداد کو مسترد کرنا او آئی سی اور میزبان برادر اسلامی ملکوں کی توہین ہے۔ ، امید ہے برادر اسلامی ممالک کو پاکستان کے تحفظات کی سمجھ آگئی ہو گی،بی جے پی کے وزیر مملکت نے بھی اپنی حکومت کے دعوؤں کی نفی کر دی ہے اور بھارت کے اپنے لوگ پلوامہ حملہ مودی حکومت کا کارنامہ قرار دے رہے ہیں کہ انہوں نے انتخابی مہم کیلئے اپنے ہی بے گناہ فوجیوں کو مروادیا، گزشتہ روز انہوں نے اپنے بیان میں کہا کہ نریندر مودی انتخابی جنون میں جنوبی ایشیاء میں غیر ملکی قوتوں کے ایماء پر لاشوں کا کھیل کھیلنا بند کر دیں اور کارکردگی کی بنیاد پر الیکشن میں جائیں۔

،انہوں نے کہا کہ حالیہ جارحانہ اقدامات اور دعوؤں کو عالمی میڈیا نے بے نقاب کر دیا ہے اور فتح کے اعلان کرنے والے نریندر مودی اور اس کی فوج کٹہرے میں کھڑی ہے،نریندر مودی نے اپنے جھوٹوں کی وجہ سے پورے بھارت کو عالمی کٹہرے میں کھڑا کر دیا ہے، انہوں نے کہا کہ فوج اور اسلحہ وطن کی حفاظت کیلئے ہوتے ہیں دوسرے ملکوں کی آزادی سلب کرنے یا غنڈہ گردی کیلئے نہیں، بھارتی حکومت جھوٹ اور تشددکی سرپرستی ترک کر دے، اس کے تباہ کن اثرات بھارت پر ہی مرتب ہورہے ہیں،بی جے پی اقلیتوں اور ہمسایوں کے حقوق کی پاسداری کرے،انہوں نے کہا کہ بھارت کی اقلیتیں اور پڑھے لکھے عوام جن میں ججز، وکلاء ،سیاستدان بھی شامل ہیں وہ بی جے پی کے پرتشدد رویے کا شکار ہیں، انہوں نے کہا کہ پاکستان امن کا داعی ہے اور ہمسایہ ملکوں میں بھی امن دیکھنا چاہتا ہے، ہمسایہ ملکوں میں امن ہو گا تو اس کا سب سے زیادہ فائدہ بھی ہمسایوں کو ہی ہوتا ہے، انہوں نے کہا کہ حیرت ہے کہ بھارت کو پاکستان سمیت کسی ہمسایہ ملک کی طرف سے جارحیت کا کوئی خطرہ نہیں ہے، اس کے باوجود بھارت اسلحے کے ڈھیر لگارہا ہے اور جنگی جنون کو ہوا دے رہا ہے، یہ رویہ کسی طور بھی علاقائی اور عالمی امن کیلئے مناسب نہیں ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...