حکومت ادویات کی قیمتوں میں اضافے فوری واپس لے،پروفیسر اشرف نظامی

حکومت ادویات کی قیمتوں میں اضافے فوری واپس لے،پروفیسر اشرف نظامی

  



لاہور(جنرل رپورٹر)حکومت ادویات کی قیمتوں میں اضافے اور سرکاری ہسپتالوں میںUser Charges اور دوسری سہولیات کی فراہمی کے نام پر غریب آدمی سے علاج معالجہ کی سہولیات چھیننے کے فیصلہ کو فوری واپس لے۔ان خیالات کا اظہار پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن کے ایک اجلاس میں کیا گیا جس کی صدارت پروفیسر محمد اشرف نظامی نے کی۔ اجلاس میں جنرل سیکریٹری ڈاکٹر ملک شاہد شوکت، ڈاکٹر اظہار احمد چوہدری، ، ڈاکٹر تنویر انور، اجمل نقوی، ڈاکٹر سکندر حیات گوندل، ڈاکٹر احمد نعیم اختر، ڈاکٹرارم شہزادی، ڈاکٹر علیم نواز، ڈاکٹر واجد علی نے شرکت کی۔ اجلاس میں ہسپتالوں میں صحت کی سہولیات کی فراہمی کی مد میں مبینہ اضافہ پر تفصیلی غور کیا گیا۔

اور شدید تشویش کا اظہار کیاگیا۔

اور قرار دیا کہ یہ آئین پاکستان میں دئیے گئے بنیادی حقوق کی صریحاً خلاف ورزی ہے۔ حکومت ایک طرف تو صحت کی سہولیات کی فراہمی اور طبقاتی نظام کے خاتمہ کیلئے صحت سہولت کارڈ کا اجراء کررہی ہے اور دوسری طرف عوام کو فراہم کی جانے والی طبی سہولیات کا حصول نہ صرف مشکل بلکہ ناممکن بنارہی ہے۔اجلاس میں محکمہ صحت سے مطالبہ کیا گیا کہ وہ اس قسم کے فیصلوں کو فی الفور واپس لے اور صحت کے نظام کو بہتر بنانے کیلئے محکمہ صحت مکمل طور پر ڈاکٹروں کے حوالے کرئے تاکہ اس طرح کے ناعاقبت اندیش فیصلوں سے عوام الناس میں موجودہ حکومت کی ساکھ متاثر نہ ہو۔

مزید : میٹروپولیٹن 4