سکلز اولمپک حقیقی صنعتی انقلاب برپا کرنے کی بنیاد ثابت ہو گا‘چیئرمین نیوٹیک

سکلز اولمپک حقیقی صنعتی انقلاب برپا کرنے کی بنیاد ثابت ہو گا‘چیئرمین نیوٹیک

  



لاہور(نیوزرپورٹر)نیشنل ووکیشنل اینڈ ٹیکنیکل ٹریننگ کمشن کے چیئرمین جاوید حسن نے سمال اینڈ میڈیم انٹر پرائزز ڈویلپمنٹ اتھارٹی (سمیڈا ) کو پاکستان میں پہلے سکلز اولمپک کے کامیاب انعقاد پر مبارکباد پیش کی ہے اور کہا ہے کہ سکلز اولمپک کا اجرا ملک میں حقیقی صنعتی انقلاب برپا کرنے کی بنیاد ثابت ہو گا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے یہاں سمیڈا، جاپان انٹرنیشنل کوآپریشن ایجنسی (جائیکا) ، پاکستان ایسوسی ایشن آف آٹو پارٹس اینڈ ایکسیسریز مینوفیکچررز (پاپام) اور انفٹی سکول آف انجینئرنگ کے اشتراک سے منعقدہ پہلے سکلز اولمپک کی تقریب سے مہمان خصوصی کے طور پر خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر خطبہءِ استقبالیہ سمیڈا کے چیف ایگزیکٹوآفیسر شیر ایوب خان نے پیش کیا ۔ جبکہ دیگر مقررین میں پاپام کے وائس چیئرمین بشارت جاوید، انفنیٹی سکول آف انجینئرنگ کے چیف ایگزیکٹو آفیسر عبد الر زاق گوہر، جائیکا ایکسپرٹس ٹیم لیڈر مسٹر کینکائی اور جائیکا کی پراجیکٹ فارمولیشن ایڈوائزر مس یواینونمایاں تھیں۔چیئرمین نیوٹیک نے اپنے خطاب میں کہا کہ ترقی یافتہ ممالک کی ترقی میں سکلز اولمپک کے سلسلوں نے بنیادی کردار انجام دیا ہے۔کیونکہ معیاری سکلز کے بغیر معیاری مصنوعات کی تیاری ممکن نہیں۔عالمی سطح پر تحت سکلز اولمپکس کا سلسلہ گزشتہ 70 برس سے جاری ہے اور نیوٹیک نے دو برس قبل عالمی سکلز اولمپک کی رکنیت حاصل کی ہے۔ عالمی سطح پر سال میں دو بار سکل اولمپکس منعقد ہوتے ہیں۔افسوس کہ پاکستان محض روائتی مہارتوں تک محدود رہنے کی وجہ سے ماضی جدید مہارتوں کو فروغ نہیں دے سکا مگر اب نیوٹیک اور سمیڈا جیسے اداروں کی تخلیق سے جدیدٹیکنیکل سکلز کے فروغ کی راہیں ہموار ہو گئی ہیں۔

انہوں کہا کہ سکلز اولمپک کی جو بنیا د سمیڈا نے اس بر س رکھ دی ہے وہ آنے والے برسوں میں ہمیں صنعتی انقلاب سے ہمکنار کرانے کے علاوہ عالمی سکلز اولمپکس میں شرکت کے قابل بھی بنا دے گی۔ انہوں نے کہا کہ یہ دور سی این سی مشینوں کا ہے جنہیں صنعتی پیدوار میں عام کرنے کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ نجی شعبہ کو سی این سی مشینوں اور ان کے ٹریننگ انسٹی ٹیوٹس کے منصوبوں میں کلیدی کردار انجام دینا چاہیے ۔ انہوں نے کہا کہ وہ اس سلسلے میں درکار ابتدائی فنڈنگ کے حصول کی بھرپور کوشش کریں گے۔قبل ازینسمیڈا کے چیف ایگزیکٹو آفیسر شیر ایوب نے اپنے خطبہءِ استقبالیہ میں بتا یا کہ پروگرام کے اجرا ء سے قبل آٹوپارٹس مینوفیکچرنگ یونٹوں میں پرزہ جات کے نمونے تیار کرنے کے سلسلے میں اغلاط کی شرح بے حد زیادہ تھی جس سے پیداواری اخراجات میں اضافے کے علاوہ معیار کو برقرار رکھنے میں مشکل کا سامنا تھا ۔ اس صورتحال کو بہتر بنانے کیلءئے سمیڈا کی درخواست پرجائیکا نے 2015 میں تکنیکی تعاون کا ایک چار سالہ پروگرام شروع کیا جس کیلئے جاپان سے پانچ سینئر ماہرین پاکستان آئے اور انہوں نے لاہور اور کراچی میں آٹوپارٹس بنانے والے متعدد منتخب یونٹو ں کے طویل دورے کر کے وہاں مہارتوں کے معیار کو جاپانی طریق کار کے مطابق فروغ دینے کی مشقیں کیں اور اس سمیڈا۔جائیکا پروگرام کے نتیجے میں اغلاط کی شرح میں نمایا ں کمی واقع ہوئی گئی اور پرزہ جات کے معیار اور پیداواریت میں کئی گنا اضافہ ہو گیا ہے۔ لیکن حاصل شدہ نتائج کے عملی مظاہرے اور کارکنوں کی حوصلہ افزائی کیلئے آج ویلڈنگ، پینٹنگ، کٹنگ، مشیننگ، سرفس فنیشنگ، پارٹس انسپیکشن اور فورک لفٹر ڈرائیونگ سمیت 11مہارتوں پر مبنی سکلز اولمپکس کا انعقاد کیا گیا۔ انفینیٹی سکول آف انجنئرنگ میں منعقد ہ اس اولمپک میں 250 ورکرز سیکھی جانے والی مہارتوں کا مظاہرہ کیا۔جس کے نتائج زیرتکمیل ہیں۔سکلز اولمپکس میں نجی اور سرکاری شعبہ کے نمائیدوں کے علاوہ سفارتکاروں اور عالمی ترقیاتی اداروں کے ماہرین نے بھی بڑی تعدا میں شرکت کی۔

مزید : کامرس