ایسوسی ایشن آف یورالوجیکل سرجنز کی عالمی کانفرنس8مارچ کو شروع ہو گی

ایسوسی ایشن آف یورالوجیکل سرجنز کی عالمی کانفرنس8مارچ کو شروع ہو گی

  



لاہور(جنرل رپورٹر)پاکستان ایسوسی ایشن آف یورالوجیکل سرجنز کے زیر اہتمام انٹر نیشنل کانفرنس 8تا 10مارچ کو ہو گی جس میں پاکستان کے علاوہ دیگر ملکوں سے بھی طبی ماہرین اور سرجنز شریک ہوں گے ،یہ کانفرنس نوجوان ڈاکٹروں کیلئے خصوصی طور پر ممد و معاون ثابت ہوگی جس میں انہیں بالخصوص سرجری کے جدید طریقوں سے آگاہی دی جائے گی ۔اس حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے صدر پاکستان ایسوسی ایشن آف یورالوجیکل سرجنز اور پروفیسر آف یورالوجی پی جی ایم آئی ڈاکٹر محمد نذیر نے بتایا کہ3روز ہ کانفرنس میں اندرون و بیرون ملک سے سینئر معالجین شرکت کر رہے ہیں جو اپنے سٹیٹ آف دی آرٹ لیکچرز کے ذریعے گردہ و مثانہ کے امراض ،اُن کی پیچیدگیوں اور جدید طریقہ علاج کے بارے میں نوجوان ڈاکٹرز کو مستفید کریں گے۔

پروفیسر محمد نذیر نے کہا کہ بد قسمتی سے پاکستان میں گردے کے امراض میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے اور ہر7واں شخص اس مرض میں مبتلا ہے ، انہوں نے کہا کہ ضرورت اس امر کی ہے کہ گردے و مثانے کے امراض کے بارے میں عوام میں بھی آگاہی پیدا کی جائے تاکہ انہیں اپنا علاج آپ کرنے میں مدد مل سکے۔پروفیسر محمد نذیرنے اس کانفرنس کے انعقاد کو اس لحاظ سے بھی مثبت اقدام قرار دیا کہ موجودہ حالات میں دیگر ملکوں سے ڈاکٹرز پاکستان آ رہے ہیں جو ہماری ڈاکٹرز برادری کیلئے حوصلہ افزا امر ہے ۔ انہوں نے توقع ظاہر کی کہ 8مارچ سے شروع ہو نے والی عالمی کانفرنس یورالوجی سے متعلقہ ڈاکٹروں کیلئے خصوصی طور پر فائدہ مند ہو گی کیونکہ آپریشن کسی بھی انسانی زندگی میں انتہائی اہم مرحلہ ہوتا ہے اور زندگی بچانے کے علاوہ مریضوں کو صحت مندانہ اور نارمل حالات میں واپس لانا بھی ڈاکٹرز کی اہم ذمہ داری ہے۔

کانفرنس

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...