چارسدہ ، رشوت نہ دینے پر پولیس نے زیرحراست ملزم کو تھانے کے اندر گولی مار کر قتل کردیا

چارسدہ ، رشوت نہ دینے پر پولیس نے زیرحراست ملزم کو تھانے کے اندر گولی مار کر ...

  



چارسدہ(بیورو رپورٹ) 10لاکھ روپے رشوت نہ دینے پر پولیس نے زیر حراست ملزم کو تھانے کے اندر گولی مار کر قتل کر دیا۔ملزم کاشف کوگزشتہ روز ا پنے ماموں کو قتل کرنے کے شبہ میں پڑانگ پولیس نے حراست میں لیا تھا ۔ملزم نے محرر کی پستول اٹھا کر خود کشی کی ہے ۔ ایس ایچ او پڑانگ ، سی ائی اواور محر ر عملہ معطل کردیا گیاہے۔ ڈی پی او کا موقف ۔تفصیلات کے مطابق تھانہ پڑانگ کے اندر قتل کے مقدمہ میں زیر حراست ملزم کاشف ولد چن باچا کی مبینہ ہلاکت نے نیا موڑ اختیار کر لیا۔گزشتہ روز موٹروے انٹر چینج کے قریب نامعلوم ملزمان نے کار سورا ضیاء اللہ ولد شاہ جی گل کو قتل کر دیاتھا جس کی رپورٹ تھانہ پڑانگ میں نامعلوم ملزمان کیخلاف درج کی گئی تھی ۔پڑانگ پولیس نے اس حوالے سے کاروائی کرتے ہوئے مقتول کے بھانجے کاشف کو تحویل میں لے کر تفشیش شروع کی تھی کہ اس دوران انہوں نے مبینہ طور پر خود کشی کر لی ۔ اس حوالے سے ڈی پی او چارسدہ عرفان اللہ خان کا موقف تھا کہ قتل کے مقدمہ میں زیر خراست ملزم کاشف نے دوران تفتیش مخرر کی پستول اٹھا کر خو د پر گولی چلائی جس سے وہ جان بحق ہو گئے ۔ان کا مزید کہنا تھا کہ واقعہ کے حوالے سے تفشیش جاری ہے کہ کس طرح ملزم کو خود کشی کا موقع مل گیا ۔دوسری طرف پولیس کی تحویل میں ہلا ک ہونے والے ملزم کے بھائی اور والد نے ایس ایچ ا و پڑانگ پر دس لاکھ روپے رشوت طلب کرنے کا الزام لگایا اور کہا کہ رشوت نہ دینے پر ایس ایچ او پڑانگ عارف خان نے کاشف پر گولی چلا کر قتل کر دیا ۔انہوں نے مزید کہا کہ تدفین سے فارغ ہونے کے بعد ایس ایچ او کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کرینگے ۔انہوں نے آئی جی سے انصاف فراہم کر نے کا مطالبہ کر دیا ۔ دوسری طرف واقعہ کے فورا بعد ڈی آئی جی محمد علی چارسدہ پہنچ گئے اور واقعہ کے حوالے سے بریفنگ لی جبکہ ڈی پی او چارسدہ نے تھانہ پڑانگ کے ایس ایچ او محمد عارف خان ، سی ائی او امجد خان ، محرر عمران اور مدد محر ر محسن کی فوری معطلی کے احکامات جاری کردی ۔

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...