”دھوبی پٹکا “لگ جائے تو دفاع میں کچھ بھی ہوسکتا ہے ، میجر جنرل (ر) اعجاز اعوان کی تنبیہ

”دھوبی پٹکا “لگ جائے تو دفاع میں کچھ بھی ہوسکتا ہے ، میجر جنرل (ر) اعجاز ...
”دھوبی پٹکا “لگ جائے تو دفاع میں کچھ بھی ہوسکتا ہے ، میجر جنرل (ر) اعجاز اعوان کی تنبیہ

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)دفاعی تجزیہ کار میجر جنرل (ر) اعجاز اعوان نے کہاہے کہ پاکستان اور بھارت کا بیانیہ الگ الگ ہے ، پاکستان کا بیانیہ امن اور استحکام ہے جو لیکر عمران خان اگلے پانچ سال گزارنا چاہتے ہیں، نورا کشتی میں دو نوں پہلوانوں کا ہونا ضروری ہے لیکن ہمارا پہلوان تو کشتی کرنا ہی نہیں چاہتا لیکن اگر دھوبی پٹکا لگ جائے تو سیلف ڈیفنس میں کچھ بھی ہوسکتا ہے ۔

جیونیوز کے پروگرام ”کیپٹل ٹاک“ میں گفتگو کرتے ہوئے میجر جنرل (ر) اعجاز اعوان نے کہا کہ پاکستان اور بھارت کا بیانیہ الگ الگ ہے ، پاکستان کا بیانیہ امن اور استحکام ہے جو لیکر عمران خان اگلے پانچ سال گزارنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مودی ایک محدود جنگ چاہتا ہے اور دنیا کودکھانا چاہتاہے کہ میں جب چاہوں دہشت گردوں کے خلاف کارووائی کروں گا چاہے وہ پاکستان میں بھی بیٹھے ہوں ۔

انہوں نے کہا کہ نورا کشتی میں دو نوں پہلوانوں کا ہونا ضروری ہے لیکن ہمارا پہلوان تو کشتی کرنا ہی نہیں چاہتا لیکن اگر دھوبی پٹکا لگ جائے تو سیلف ڈیفنس میں کچھ بھی ہوسکتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ لوگوں پر پابندیاں لگاتا رہتاہے ، حکمت یار اقوام متحدہ کا مشتہر کردہ دہشت گردتھا لیکن اب وہ افغان حکومت میں شامل ہے ۔ انہوں نے کہا کہ خالد شیخ گوانٹا ناموبے میں 16سال سے پڑا ہواہے اور امریکہ اس کا ملٹری کورٹ میں ٹرائل کررہاہے لیکن ابھی تک ٹرائل کیوںنہیں ہوا ، اس کی وجہ یہ ہے کہ دہشت گردی کا ثبوت نہیں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کالعدم تنظیموں سے تعلق رکھنے والے لوگ اگر کسی معاملے میں ملوث نہیں ہیں تو ان کو قومی دھارے میں لایا جائے ۔

مزید : قومی


loading...