وزیر اعظم اگر 172 ووٹ نہ حاصل کرسکے  تو کیا ہوگا؟ آئینی ماہرین نے صورتحال واضح کردی

وزیر اعظم اگر 172 ووٹ نہ حاصل کرسکے  تو کیا ہوگا؟ آئینی ماہرین نے صورتحال ...
وزیر اعظم اگر 172 ووٹ نہ حاصل کرسکے  تو کیا ہوگا؟ آئینی ماہرین نے صورتحال واضح کردی

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن )وزیراعظم عمران خان کل (ہفتے کو) قومی اسمبلی سے اعتماد کا ووٹ لیں گے، اعتماد کے ووٹ کے لیے ان کو 172 ووٹ درکار ہونگے۔

آئینی ماہرین کے مطابق اگر وزیراعظم 172 ووٹ نہ لے سکے تو اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کو صدر پاکستان کو مراسلہ لکھنا ہوگا  جس میں کہا جائے گا کہ وزیراعظم ایوان کا اعتماد کھوچکے ہیں۔ نئے وزیراعظم کے انتخاب کے لیے قومی اسمبلی کا اجلاس طلب کیا جائے۔جس کے بعد صدر پاکستان اسمبلی کا اجلاس طلب کریں گے اور اسمبلی نئے سرے سے وزیراعظم کا انتخاب کرے گی۔

تاہم اگر عمران خان 172 یا اس سے زیادہ ووٹ حاصل کرنے میں کامیاب ہوجاتے ہیں  تو وہ وزیراعظم کے عہدے پر برقرار رہیں گے۔ قومی اسمبلی میں حکومتی اتحاد کو 180 ممبران کی سپورٹ حاصل ہے۔ وزیراعظم پر اعتماد کا ووٹ اوپن ہوگا۔ ممبران اسمبلی کھڑے ہوکریا ہاتھ اٹھا کر وزیراعظم کے حق میں ووٹ دینگے۔

مزید :

قومی -