جان کو خطرہ ہے، میرے گھر کو سب جیل بنا دیا جائے: حلیم عادل شیخ 

جان کو خطرہ ہے، میرے گھر کو سب جیل بنا دیا جائے: حلیم عادل شیخ 
جان کو خطرہ ہے، میرے گھر کو سب جیل بنا دیا جائے: حلیم عادل شیخ 

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان تحریک انصاف(پی ٹی آئی) کے رہنما اور سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر حلیم عادل شیخ نےکہا  ہے کہ میری  جان کو خطرہ ہے لہذا میرے  کے گھر کو سب جیل بنا دیا جائے۔

اپوزیشن لیڈر حلیم عادل شیخ نے سندھ اسمبلی آمد پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ فریال تالپور، آغا سراج درانی، بابل بھیو اور دیگر کا گھر "سب جیل" بن سکتا ہے پر اپوزیشن لیڈر سندھ کا گھر سب جیل نہیں بن سکتا کیوںکہ وہ پی ٹی آئی کا ہے اور وہ اِن کو بے نقاب کرتا ہے۔اُنہوں نے کہا کہ سائیں صدر الدین شاہ راشدی کے ساتھ جس نے بھی غداری کی ہے، اس کے خلاف پارٹی ایکشن لے گی،  افسوس، ایک بار پھر پیسے کی سیاست کی گئی،  میری ٹانگ پر سوجن موجود ہے، میں چاہتا تو ویل چیئر پر آسکتا تھا، پر میں پیپلز پارٹی کے ایم پی ایز کی طرح بہانے نہیں بناتا،مجھے عدالتوں پر اعتماد ہے۔

حلیم عادل شیخ کا کہنا تھا کہ سندھ اسمبلی میں اپوزیشن کی لابی میں پیپلز پارٹی کے 2 وزراء آکر پوچھتے ہیں حلیم عادل شیخ کہاں ہے؟گالیاں دیتے ہیں، ان کی شاید ڈیوٹی لگ گئی ہے کہ حلیم عادل کو تنگ کرو جو زیادہ تنگ کرے گا اسے وزیر اعلی بنا دیا جائے گا، اسی لئے سب اپنا اپنا حصہ ڈال رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف سینیٹ میں سب سے بڑی جماعت بن گئی، عمران خان اعتماد کا ووٹ لیں گے اور کامیاب بھی ہوں گے،پاپا ڈیڈی بچاو مومنٹ والے عمران خان سے این آر او  لینا چاہتے ہیں، پی ڈی ایم ڈاکو مومنٹ عمران خان کو نہیں جانتی، عمران خان صاحب اسمبلی سے اعتماد کا ووٹ لیں گے تو تیرا کیا بنے گا کا لیا ؟؟۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -