مصطفیٰ ٹاؤن کا اکلوتا پارک کرکٹ گراؤنڈ میں تبدیل ‘ورزش کیلئے لگائی جانیوالی مشینیں بھی فروخت

مصطفیٰ ٹاؤن کا اکلوتا پارک کرکٹ گراؤنڈ میں تبدیل ‘ورزش کیلئے لگائی جانیوالی ...

 لا ہور(سروے رپورٹ میاں اشفاق انجم۔تصاویر ایوب بشیر)مصطفی ٹاؤن وحدت روڈ کا اکلوتا پارک بچوں نے کرکٹ گراونڈ بنا لیا ،گھاس غائب،گیٹ توڑ دیے گئے پی ایچ اے کی طرف سے ایکسر سائز کے لیے لگائی گئی مشینری فروخت کر دی گئیں ،مصطفی ٹاؤن کی گرین بیلٹ پر بھینسوں کا قبضہ،سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ،ہدایت اللہ بلاک، عباس بلاک ،شہباز بلاک ،پاک ٹاؤن ،اعظم گارڈن کی سڑکوں پر گدھوں،بھیڑ بکریوں اور کتوں کا راج ،مصطفی ٹاؤن کے رہائشیوں نے پی ایچ اے کے ذمہ داران کو مصطفی ٹاون کے اکلوتے پارک کی تباہی کا ذمہ دار قرار دیتے ہوئے انہیں بر طرف کرنے کا مطالبہ کر دیا روزنامہ پاکستان کے سروے میں خواجہ طارق ،چودھری اصغر،چودھری خادم حسین ،حاجی مقبول احمد،انوار الحق چودھری،گلزار بٹ،چودھری صدیق،عنصر چودھری،نثار بھٹی،رانا حنیف،قدرت اللہ، وسیم ڈار،غلام محیے الدین ،شیخ غلام علی،حاجی شوکت اور ریاض شاہ کی خصوصی گفتگو،مصطفی ٹاؤن کے رہائشیوں نے مطالبہ کیا کہ مصطفی ٹاؤن کے پارک کے ساتھ موجود سکول کی جگہ کو پارک میں شامل کر دیا جائے اور پارک کو مصطفی ٹاؤن کے رہائشیوں کے لیے مخصوص کر دیا جائے،چودھری انوار الحق نے کہا مصطفی ٹاؤن مسائلستان بن گیا ہے اکلوتا ٹیوب ویل ہے خراب ہو تو پانی نہیں ملتا دوسرا ٹیوب ویل منظور ہونے کی خوشخبریاں آ رہی ہیں ابھی تک نہیں لگایا جا رہا،اعظم گارڈن کے شہباز بلاک تک سڑک توڑ دی گئی ہے لیکن کوئی بھی بنانے نہیں آ رہا ،خواجہ طارق نے کہا سڑکوں سے کوڑا اٹھانے کا کوئی انتظام نہیں، سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں چودھری اصغر نے کہا مصطفی ٹاؤن کو چاروں اطراف سے فیکٹریوں نے گھیر رکھا ہے آلودگی کی وجہ سے بیماریاں پھیل رہی ہیں فیکٹریاں باہر منتقل کی جائیں ،حاجی مقبول احمد نے کہا مصطفی ٹاؤن کا اکلوتا پارک لا وارث ہے مالی غائب ہیں خوبصورت پارک عدم توجہ کی وجہ سے کھنڈر بن رہا ہے گیٹ توڑ دیے گئے ہیں شام ہوتے ہی بھنگیوں کا قبضہ ہو جاتا ہے پی ایچ اے کے ذمہ داران تباہی کے ذمہ دار ہیں ڈی جی سے مطالبہ کرتا ہوں کہ ہمارے علاقے کے ڈپٹی ڈائریکٹر اور ڈائریکٹر کو بر طرف کیا جائے انہوں نے مزید کہا کہ جم بنایا گیا ،کنٹین بنائی گئی جم کی مشینیں نہیں ہیں ،کنٹین کا آغاز نہیں ہوا گرین بیلٹ پر بھینسوں ،گدھوں کا قبضہ رہتا ہے ،عالمگیر نے کہا فیکٹریوں کی وجہ سے بیمار ہو رہے ہیں ماحولیات والے اگر زندہ ہیں تو فیکٹریاں شہر سے باہر نکالیں ،جاوید یحیےٰ نے کہا کہ صفائی کا معقول انتظام کیا جائے ،چودھری خادم حسین نے کہا مقامی ایم این اے ،ایم پی اے ووٹ لینے کے دو سال بعد بھی اہل علاقہ کے لیے کچھ نہیں کر سکے جدھر دیکھیں بھینس ہی بھینس نظر آتی ہیں ہمارے علاقے میں اگر کوئی مضبوط چیز نظر آتی ہے تو وہ بھتہ مافیا ہے ذمہ داران مصطفی ٹاؤن کی ٹوٹ پھوٹ کا شکار سڑکوں پر توجہ دیں اور اکلوتے پارک کو لا وارث نہ چھوڑیں ہمیں جینے کا حق دیں پارک کو کھنڈر بننے سے بچائیں ،رانا حنیف نے کہا سڑکیں تباہ حال ہیں ،نثار بھٹی نے کہا مصطفی ٹاؤن سے ملحقہ آبادی ہے ا یک پارک تھی وہ بھی قبضہ گروپ نے ہتھیا لی ہے ،وسیم ڈار نے کہا ایل ڈی اے اپنی بنائی ہوئی سکیم کی ذمہ داری بھی لے اور دیکھیں ہم کس حال میں رہتے ہیں ،چودھری صدیق نے کہا ہم 1906ء سے مسلم لیگی ہیں نواز شریف اور شہباز شریف سے محبت کرتے ہیں لہٰذا وہ ہمارے اوپر رحم کھائیں ہماری سڑکیں بنائیں شیخ غلام علی،حاجی شوکت ،ریاض شاہ،محمد یونس قریشی نے روز نامہ پاکستان کو بتایا مصطفی ٹاؤن ایل ڈی اے کے نام کی حد تک سکیم ہے حمدوٹ بلاک سے آگے آنے کے لیے نہ ایل ڈی اے تیار ہے نہ پ ی ایچ اے ،مصطفی ٹاؤن کی طرف خصوصی توجہ دی جائے ،اس حوالے سے پارک میں موجود مالی سے بات کی گئی تو اس نے کہا کہ اگر کرکٹ کھیلنے والوں کو منع کریں تو مارتے ہیں،ہم غریب آدمی ہیں محنت مزدوری کرتے ہیں

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...