پیف نے چولستان کے پارٹنر سکولوں کے اساتذہ کی کپیسٹی بلڈنگ کا کام مکمل کر لیا

پیف نے چولستان کے پارٹنر سکولوں کے اساتذہ کی کپیسٹی بلڈنگ کا کام مکمل کر لیا

لاہور(ایجوکیشن رپورٹر)پنجاب ایجوکیشن فاؤنڈیشن نے چولستان کے 75پارٹنر سکولوں کے اساتذہ کی کپیسٹی بلڈنگ کا کام مکمل کر لیا ہے اس مقصد کے لیئے ان سکولوں کے اساتذہ کی دو مختلف تربیتی ورکشاپس منعقد کی گئیں اس تربیتی سلسلے کا مقصد چولستان کے صحرائی علاقوں کے سکولوں کا معیار تعلیم بہتر بنانا ہے تاکہ طالبعلموں کو کوالٹی ایجوکیشن ملے۔ پیف ترجمان کے مطابق سکول اساتذہ کی سہولت کے لیئے تربیتی ورکشاپس پانچ مختلف کلسٹرز میں منعقد کی گئیں۔ تین دن دورانیہ کی تربیتی ورکشاپ کے دوران اساتذہ کو اردو ، ریاضی اور انگریزی کے مضامین کے بارے میں جدید تعلیمی تصورات سے اگاہ کیا گیا۔ ان اساتذہ کو کلاس روم مینجمنٹ ، چائلڈ سائیکالوجی اور دیگر تعلیمی موضوعات کے بارے میں بھی لیکچرز دیئے گئے ترجمان کے مطابق یہ تربیتی ورکشاپ بصارت سے محروم اسسٹنٹ ڈائریکٹر رشید احمد پھلرواں کی جانب سے منعقد کی گئیں ۔     انہوں نے بصارت کی کمی کو اپنی پیشہ ورانہ ذمہ داریوں میں کبھی حائل نہیں ہونے دیااور موسمی اور سفری صعوبتوں کے باوجو د چولستان کے مختلف علاقوں کے دورے کر کے اساتذہ کے لیئے تربیتی ورکشاپ منعقد کیں۔    قبل ازیں انہوں نے مختلف سکولوں کے دورے کر کے اساتذہ کی تعلیمی ضروریات کا اندازہ لگایا ۔ ترجمان کے مطابق بہاولپور ڈویژن کے چولستانی صحر ا میں قائم 75سکو لز کے پانچ ہزار طلبا ء و طالبات کی تعلیم کا بیڑہ پیف نے اٹھا رکھا ہے ۔ یہ سکول پیف کے "نیو سکول پروگرام "سے منسلک ہیں ۔ چولستان ڈیویلپمنٹ اتھارٹی کے ساتھ ایک باہم معاہدہ کے تحت ان طالبعلموں کی ماہانہ فیس اور نصابی کتب پیف مہیا کر تی ہے۔ اسی طرح ان سکولوں کا معیار تعلیم بہتر بنانے کے لیئے اساتذہ کی کپیسٹی بلڈنگ بھی کی جاتی ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...