عدالت کی لڑکی کے بیان پر خاوند کے ساتھ جانے کی اجازت

عدالت کی لڑکی کے بیان پر خاوند کے ساتھ جانے کی اجازت

 لاہور(نامہ نگار)ایڈیشنل سیشن جج نے پسند کی شادی کرنے والی لڑکی کے بیان کے بعد اسے خاوند کے ساتھ بھجواتے ہوئے والدین کی جانب سے دائر اغواء کی درخوست نمٹا دی ہے ۔عدالت میں نورین بی بی کے والدین کی جانب سے دائر درخواست میں موقف اختیار کیا گیا تھا کہ حسن نامی شخص نے ان کی بیٹی کو زبردستی اغواء کے اپنے پاس محبوس کررکھا ہے لہذا عدالت سے استدعا ہے کہ سائل کی بیٹی کو بازیاب کروانے کا حکم دیا جائے۔      عدالتی حکم پر پولیس نے لڑکی کو عدالت میں پیش کردیا جہاں لڑکی نے بیان دیا کہ اسے کسی نے اغواء نہیں کیا ہے بلکہ اس نے اپنی مرضی سے اس کے ساتھ کی شادی کی ہے اور وہ اس کے ساتھ رہنا چاتی ہے جبکہ اس والدین نے اس کے شوہر کے خلاف جھوٹی اغواء کی درخواست دائر کررکھی ہے ،عدالت نے لڑکی کے شوہر کے ساتھ جانے کی بیان پر اسے اس کے ساتھ بجھوانے کا حکم دے دیا ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...