بھارتی نظام تعلیم کا پول کھل گیا؟گائے کو اعلی تعلیم کیلئے داخلہ مل گیا

بھارتی نظام تعلیم کا پول کھل گیا؟گائے کو اعلی تعلیم کیلئے داخلہ مل گیا
بھارتی نظام تعلیم کا پول کھل گیا؟گائے کو اعلی تعلیم کیلئے داخلہ مل گیا

  


سری نگر(مانیٹرنگ ڈیسک) سرکاری محکموں کے فرسودہ نظام سے ، خصوصاً پاکستان اور بھارت میں، کس کو پالا نہیں پڑتا۔تعلیمی نظام ہی کو لیں، امتحانات کے مواقع پر کیسی کیسی سنگین غلطیاں دیکھنے کو ملتی ہیں، کبھی طلبہ کو ڈیٹ شیٹس نہیں ملتیں، ملتی ہیں تو ناموں، رول نمبرز و دیگر کوائف میں گڑ بڑ ہوتی ہے، نتائج آتے ہیں تو پاس ہونے والے امیدوارکو فیل اور فیل ہونے والے کو پاس کر دیا گیا ہوتا ہے۔ ایک آدھ کیس تو ایسا بھی دیکھنے میں آیا ہے کہ امیدوار کے حاصل کردہ نمبر پرچے کے کل نمبروں سے بھی زیادہ آئے۔ اسی فرسودہ اور ناکارہ نظام کو جانچنے کے لیے مقبوضہ کشمیر میں ایک شخص عبدالرشید بھٹ نے ایک انوکھا کام کیا، عبدالرشید نے بورڈ آف پروفیشنل ایگزامینیشن (بی او پی ای) کے نظام کو جانچنے کے لیے اپنی گائے کا داخلہ بھجوا دیا۔ اس نے داخلہ فارم میں اپنی گائے کا نام کچیر گاﺅ اور والد کا نام گورا داند لکھا، گائے کی ایک تصویر لگائی اور فارم بورڈ میں جمع کر ا دیا۔

اس کی حیرت کی انتہاءنہ رہی جب بورڈ کی طرف سے اس کی گائے کی ڈیٹ شیٹ اسے موصول ہو گئی، ڈیٹ شیٹ پر اس کا فراہم کردہ گائے اور اس کے باپ کا نام تو درکنار، گائے کی تصویر بھی موجود تھی۔ عبدالرشید بھٹ کا کہنا ہے کہ اسے شدید جھٹکا لگا جب اسے گائے کا داخلہ کارڈ موصول ہوا، میں امتحان کے دن اپنی گائے کو امتحانی سنٹر ضرور لے کر جاﺅں گا۔دوسری طرف بی او پی ای کا کہنا ہے کہ وہ صرف لفظی غلطیوں والے فارم مسترد کرتے ہیں، چونکہ اس فارم پر کوئی لفظی غلطی نہیں تھی اس لیے منظور کر لیا گیا۔ لیکن کوئی سوچے کہ کارڈ پر لگی گائے کی تصویر کا کیا؟بھٹ کا کہنا ہے کہ اس فعل سے اس کا مقصد کسی کو تکلیف دینا یا مذاق اڑانا نہیں تھا۔ میرا مقصددنیا کو یہ دکھانا تھا کہ کس طرح تعلیمی بورڈ والے ہزاروں طلباءو طالبات کے مستقبل سے کھیلتے ہیں۔ میں نے یہ ریاست اور اس کے اداروں کی بھلائی کے لیے کیا۔ 

مزید پڑھیں :کام کرنے دیا جائے ملک کی روشنیاں واپس لوٹائیں گے،وزیراعظم نواز شریف

؎

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...