مچلکے داخل نہ کئے تو ضمانت منسوخ ،بینکنگ کرائمز کورٹ کی پی ٹی آئی پنجاب کے صدر کو وارننگ 

مچلکے داخل نہ کئے تو ضمانت منسوخ ،بینکنگ کرائمز کورٹ کی پی ٹی آئی پنجاب کے ...
مچلکے داخل نہ کئے تو ضمانت منسوخ ،بینکنگ کرائمز کورٹ کی پی ٹی آئی پنجاب کے صدر کو وارننگ 

  


لاہور(نامہ نگار)بینکنگ کرائمزکورٹ نے بینک آف پنجاب فراڈ کے مقدمہ میں ملوث صدر تحریک انصاف پنجاب اعجاز چودھری کی جانب سے 5لاکھ روپے کے ضمانتی مچلکے جمع نہ کروانے پر انہیں13مئی کو طلب کرلیا ہے ۔عدالت نے وارننگ دی ہے کہ مچلکے جمع نہ کروانے کی صورت میں اعجاز چودھری کی ضمانت منسوخ کردی جائے گی ۔استغاثہ کے مطابق اعجاز چودھری اور عثمان عبیداللہ نے رائے ونڈ روڈ پر واقع کمپنی کسان کیئر پرائیویٹ لمیٹڈکے لئے بینک آف پنجاب سے 3 کروڑ 40لاکھ روپے قرض لئے تھے اور اس کے لئے انہوں نے کمپنی کا سٹاک بینک کے پاس گروی رکھا تھا۔بینک آف پنجاب نے ایف آئی اے میں الزام لگایا ہے کہ اعجاز چودھری اور عثمان عبیداللہ نے کمپنی کے گروی سٹاک میں سے 50لاکھ کا سٹاک خوردبرد کر لیا،مقدمہ کے اندراج پر اعجاز چودھری اور عثمان عبید اللہ نے بینک کرائمز کورٹ سے عبوری ضمانت کرائی اور بینک سے معاملات درست کرنے کے لئے مہلت مانگی تھی جس کے بعد اعجاز چودھری گزشتہ سماعت پربینکنگ کرائمز کورٹ میں پیش ہوئے اور عدالت کو بتایا کہ ان کا بینک سے سمجھوتہ ہو گیا ہے اور انہوں نے بینک کے واجب الادا قر ض کی ادئیگی کرتے ہوئے 3 کروڑ ایک لاکھ جمع کرا دیا ہے۔ بینک کے وکیل کی جانب سے تصدیق کرنے پر عدالت نے اعجاز چودھری کی ضمانت منظور کرتے ہوئے انہیں مچلکے جمع کروانے کا حکم دیا تھا تاہم تاحال اعجاز چودھری کی جانب سے مچلے جمع نہیں کروائے گئے ہیں جس پر بینکنگ عدالت نے گزشتہ روز سماعت کے بعد اعجاز چودھری کو آئندہ سماعت پر طلب کرلیا ہے ۔

مزید : لاہور


loading...