پنجاب :گندم خریداری مہم ،پالیسی اوپن ،خسرہ گرداوری کی شرط ختم

پنجاب :گندم خریداری مہم ،پالیسی اوپن ،خسرہ گرداوری کی شرط ختم

  

ملتان، مظفرگڑھ ، راجن پور ، ڈیرہ غازی خان ( سپیشل رپورٹر، بیورو رپورٹ ، خبر نگار، نامہ نگار ، نمائندہ خصوصی)محکمہ خوراک کی گندم خریداری پالیسی کی بری طرح ناکامی کے بعد حکومت پنجاب نے صوبہ بھر میں گند م خریداری اہداف کیلئے گندم خریداری اوپن کردی تمام مراکز سے سینٹر کوآرڈینٹر اور (بقیہ نمبر19صفحہ12پر )

محکمہ ریونیو کا عملہ ہٹا لیا گیا ۔خسرہ گرداروری کی شرط بھی ختم کردی گئی ۔اس ضمن میں ڈسٹرکٹ فوڈ کنٹرولر ملتان امان اللہ سومرو نے کہا ہے کہ حکومت پنجاب نے گندم خریداری کی اوپن پالیسی کی منظوری دے دی ہے۔ نئی پالیسی کے مطابق باردانہ کے لیے زمین کی گرداوری اور ملکیت کے حساب سے بوریوں کی تعداد کی شرط ختم کر دی ہے۔ اب ہر شخص محکمہ خوراک کو گندم فروخت کر سکتا ہے اور ہر فرد کو 200 بوری جیوٹ یا 400 بوری پی پی بیگ جاری کئے جاسکتے ہیں۔ انہوں نے کہا ہے کہ جاری کردہ باردانہ میں گندم مرکز خریداری لانے کے بعد مزید اتنا ہی باردانہ اس شخص یا کاشتکار کو جاری کیا جا سکے گا۔ اس اوپن پالیسی کا بنیادی مقصد یہ ہے کہ کسانوں سے گندم کا دانہ دانہ خریدا جائے۔ ڈسٹرکٹ فوڈ کنٹرولر محکمہ خوراک نے کہا کہ حکومت نے گندم کی قیمت ادائیگی کا طریقہ آسان کر دیا ہے تاکہ کسانوں کا وقت ضائع نہ ہو۔ اب مخصو ص بنکوں کی بجائے کاشتکاروں کو ٹرانسفر ایبل چیک جاری کیے جا سکیں گے تاکہ کسی بنک سے ادائیگی کی جا سکے۔انہوں نے انتباہ کیا کہ بشمول فیڈ ملز گندم کی غیر قانونی خریداری اور ذخیرہ اندوزی میں ملوث مافیا کے خلاف سخت کریک ڈاون کیا جائے گا اور سٹاک کی گندم ضبط کر لی جائے گی۔ اس حوالے سے تمام ڈسٹرکٹ فوڈ کنٹرولر کو ہدایات جاری کر دی گئی ہیں۔ ڈپٹی کمشنر مظفرگڑھ ڈاکٹر احتشام انور نےآج گندم خریداری مہم کی نگرانی کے سلسلے میں گندم خریداری مرکز ریلوے سٹیشن مظفرگڑھ ون کا معائنہ کیا. اس موقع پر اسسٹنٹ کمشنر مظفرگڑھ ظہور حسین بھٹہ بھی ان کے ساتھ تھے.ڈپٹی کمشنر کے دورے کے دوران فوڈ سنٹر پر محکمہ فوڈ کا عملہ غائب .ڈپٹی کمشنر نے سخت برہمی کا اظہار کیا . غیر حاضری پر فوڈ انسپکٹر مہر جاوید کو شوکاز نوٹس جاری کرنے کا حکم دیا. اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس سال حکومت پنجاب نے ضلع مظفرگڑھ میں محکمہ خوراک کو 1لاکھ 41ہزار 285میٹرک ٹن گندم خریداری کا ہدف دیا ہے . گندم خریداری کی عمل کو نہایت شفاف بنایا جارہا ہے. اس سلسلے میں غفلت برتنے والو ں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی. انہوں نے کہا کہ ہر مرکز پر کاشتکارں کے بیٹھنے کیلئے سایہ دار جگہ، کرسیاں، پینے کے پانی اور بجلی پنکھوں کی سہولت فراہم کی گئی ہے .انہوں نے محکمہ خوراک کے عملے کو ہدایت کی کہ وہ تمام متعلقہ مراکز پر اپنی حاضری کو یقینی بنائیں.ڈپٹی کمشنر راجن پور محمد افضل ناصر نے محکمہ خوراک کے افسران کو سختی سے ہدایات کرتے ہوئے کہا ہے کہ فوڈ سنٹرز پر گندم کے وزن میں کمی کو ہرگز برداشت نہیں کیا جائے گااور نہ ہی اس سلسلے میں کسی قسم کی کوتاہی کو برداشت کیا جائے گا۔محکمہ خوراک کے افسران اپنا قبلہ درست کر لیں۔یہ باتیں انہوں نے فوڈ سنٹر کوٹ مٹھن میں اچانک دورہ کے دوران گندم کے وزن کو چیک کرتے ہوئے کہیں۔مشیر صحت وزیر اعلی پنجاب محمد حنیف پتافی نے ڈپٹی کمشنر ڈیرہ غازی خان طاہر فاروق کے ہمراہ گندم خریداری مراکز اور رمضان بازاروں کا اچانک دورہ کیا انہوں نے گندم خریداری کے عمل کا جائزہ لیا۔مخصوص آلات کے ذریعے گندم کی نمی چیک کی سنٹرزکوآرڈینٹرز ،عملہ اور کاشتکاروں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ گندم خریداری عمل میں میرٹ اور شفافیت کو یقینی بنایا جائے۔انہوں نے مراکز پر کاشتکاروں کو فراہم سہولیات کا بھی جائزہ لیا۔مشیر صحت محمد حنیف پتافی نے ڈپٹی کمشنر طاہر فاروق کے ساتھ چوک چورہٹہ،ماڈل بازار سمیت دیگر رمضان بازاروں کا بھی معائنہ کیا پھل،سبزیوں سمیت دیگر اشیاءکا معیار اور نرخ چیک کئے۔مشیر صحت محمد حنیف پتافی نے کہا کہ صارف کو ہر رمضان بازار میں معاشی ریلیف دیا جائے تاہم اشیائے خوردونوش کے معیار پر ہرگز سمجھوتہ نہیں کیا جائیگا۔ڈپٹی کمشنر طاہر فاروق نے کہا کہ ضلع میں چار رمضان بازار فنکشنل ہیں جہاں عام مارکیٹ کی نسبت معیاری اشیاءسستے داموں فراہم کی جارہی ہیں۔واضح رہے کہ حکومت پنجاب کی طرف سے مشیر صحت محمد حنیف پتافی کو ضلع ڈیرہ غازی خان کے رمضان بازاروں کی چیکنگ کی ذمہ داری سونپی گئی ہے

دورہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -