عاقب جاوید نے قومی ٹیم میں دو سپنرز لازمی قرار دے دیئے

عاقب جاوید نے قومی ٹیم میں دو سپنرز لازمی قرار دے دیئے

  

لاہور(سپورٹس رپورٹر)سابق قومی فاسٹ بالرعاقب جاوید کا کہنا ہے کہ ورلڈ کپ کیلئے قومی سکواڈ میں دو اسپنرز کا ہونا لازمی ہے اور لیگ اسپنر شاداب خان کے ساتھ آل راو¿نڈر محمد حفیظ کی آف سپن بالنگ اہم ترین کردار نبھا سکتی ہے۔ایک گفتگو میں عاقب جاوید نے امید ظاہر کی کہ دونوں کھلاڑی میگا ایونٹ سے قبل مکمل فٹ ہو جائیں گے اور ان کی موجودگی میں پاکستانی ٹیم انگلش کنڈیشنز کا بھرپور فائدہ اٹھانے میں کامیاب رہے گی۔ عاقب جاوید کا کہنا تھا کہ عماد وسیم بہت اچھے لیکن سازگار کنڈیشنز کے باﺅلر ہیں جن کو موزوں ماحول مل گیا تو وہ بھی عالمی کپ میں کارآمد ثابت ہو سکتے ہیں کیونکہ ون ڈے کرکٹ اب ماضی کے مقابلے میں کافی تبدیل ہو گئی ہے جس میں باﺅلر اپنی چالاکی سے ہی وکٹیں حاصل کرسکتا ہے کیونکہ اعلیٰ معیار پر بیٹسمین کو جانچتے اور پرکھتے ہوئے حالات کے حساب سے بڑی نپی تلی بالنگ کرنا ہوتی ہے۔لاہور قلندرز کے ڈائریکٹر نے نوجوان پیسر محمد حسنین کو باصلاحیت باﺅلر قرار دیتے ہوئے کہا کہ وہ انگلینڈ میں کافی خطرناک ثابت ہو سکتا ہے لیکن ضروری ہوگا کہ اسے درستگی کے ساتھ استعمال اور گائیڈ کیا جائے۔ عاقب جاوید کا کہنا تھا کہ پاکستان کے پاس اچھے فاسٹ باﺅلرز لیکن تجربے کی کمی کا شکار ہیں جن کو پریکٹس میچوں کے دوران کنڈیشنز سے آگاہی ہوئی ہو گی لیکن سینئرز کی ذمہ داری ہے کہ وہ انہیں ورلڈ کپ جیسے بڑے ایونٹ کیلئے اعتماد فراہم کریں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ جارح مزاج بیٹسمین آصف علی کو ہارڈ ہٹر کی حیثیت سے ورلڈ کپ سکواڈ میں شامل کرنا چاہئے تھا کیونکہ اختتامی لمحات میں میچوں کو کامیابی سے فنش کرنے کیلئے ایسے بیٹسمینوں کی ضرورت پڑ جاتی ہے۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -