مقبوضہ کشمیر:قابض فوج کا امام مسجد پر تشدد یاسین ملک کی حالت نازک ،مشعال ملک

مقبوضہ کشمیر:قابض فوج کا امام مسجد پر تشدد یاسین ملک کی حالت نازک ،مشعال ملک

  

سری نگر،جموں(این این آئی)مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوجیوں نے جموں خطے کے ضلع پونچھ کی ایک جامع مسجد کے امام کوبلا وجہ سخت مارپیٹ کا نشانہ بنایا ۔ بہیمانہ واقعے کے خلاف لوگوں نے زبردست احتجاجی مظاہرے کیے۔ کشمیر میڈیاسروس کے مطابق قابض بھارتی فوجیوںنے پونچھ کے علاقے لوزن منڈی کی مرکزی جامع مسجد کے امام و خطیب مولانا عبدالحمید نجمی کو کولگام کے علاقے نہامہ میں اس وقت بہیمانہ طریقے سے مارپیٹا جب وہ وادی کشمیر کے اپنے دورے کے بعد واپس پونچھ لوٹ رہے تھے۔ بھارتی فوجیوں نے انہیں گاڑی سے اتار کر ایک گھنٹے تک تشدد کا نشانہ بنایا۔ لوگوں میں غم و غصے کی سخت لہر دوڈ گئی اور انہوں نے کئی مقامات پر زبردست احتجاجی مظاہرے کیے۔ سری نگر میں کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین سید علی گیلانی کو طبی معائنے کیلئے صورہ ہسپتال داخل کیاگیا ۔ کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق سید علی گیلانی کو1997ءسے پیس میکر لگا ہواہے۔ دل کے ڈاکٹروں کی ایک ٹیم نے انکے پیس میکر کا جنریٹر تبدیل کیا ۔ جنریٹرکی تبدیلی کا یہ عمل قریباً دیڑھ گھنٹے تک جاری رہا ۔ انہیں انتہائی نگہداشت وارڈ میں رکھا گیا ہے ۔حریت رہنما یاسین ملک کی اہلیہ مشعال ملک نے کہا ہے کہ بھارتی حکومت کا منصوبہ ہے کہ ان کے شوہر کو جیل میں مار دیا جائے ،میں پاکستانی عوام ، سول سوسائٹی اور حکومت سے اپیل ہے کہ یاسین ملک کی رہائی کے لئے میری آواز بنیں اور اس حوالے سے سوشل میڈیا پر مہم چلائی جائے ۔ اپنے ویڈیو پیغام میں مشعال ملک نے کہا کہ یاسین ملک نے14روز تک بھوک ہڑتال کی اور انہیں تہاڑ جیل کے ڈیتھ سیل میں رکھا گیا ہے ،ایسے حالات میں ان کی جان کو سخت خطرہ لا حق ہے ۔واضح رہے کہ یاسین ملک کو جیل میں بدترین تشدد کا نشانہ بنایا جا رہا ہے اوروہ سخت بیمار بھی ہیں۔

مشعال ملک

مزید :

صفحہ اول -