نوشہرہ،10سالہ لڑکا قتل کیس میں 2کم عمر سوتیلے بھائی گرفتار

نوشہرہ،10سالہ لڑکا قتل کیس میں 2کم عمر سوتیلے بھائی گرفتار

نوشہرہ(بےورورپورٹ)کم عمر دو سوتیلے بھائیوں نے مل کر دس سالہ معصوم بچے کو جنسی زیادتی کے بعد قتل کردیا پولیس کی بھرپور اور فوری کاروائی 48 گھنٹوں میں دونوں ملزمان الہ قتل سمیت گرفتار ملزمان کا پولیس کے سامنے اعتراف و مقامی عدالت میں اقبال جرم ملزمان سے دوران تفتیش مزید اہم انکشافات متوقع اس سلسلے میں ڈسٹرکٹ پولیس افیسر نوشہرہ کیپٹن (R) منصور امان نے ایس پی انوسٹی گیشن افتخار شاہ خان کے ہمراہ پولیس لائن نوشہرہ میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایاکہ 10سالہ ریحان 01-05-2019 کو شام کے وقت کھیل کود کیلئے گھر سے نکلالیکن واپس نہیں آیا ۔جس پر اس کے لواحقین نے 02-05-2019 کو تھانہ پبی میں رپورٹ درج کروائی جس پر پولیس نے بچے کی تلاش شروع کی ۔02-05-2019 کو عشاءکے وقت 09:00بجے شہید بابا کے قریب امانکوٹ میں بچے کی ذبح شدہ لاش ملی۔پولیس نے موقع سے شواہد اکھٹا کرکے لاش کو پوسٹ مارٹم کیلئے ہسپتال بھجوایا گیا ۔اس افسوناک واقع کا نوٹس لیتے ہوئے ڈی آئی جی مردان محمد علی گنڈاپورنے فوری طور پر ملزم / ملزمان کی گرفتاری یقینی بنانے کے احکامات جاری کئے۔جس پرڈسٹرکٹ پولیس افیسر نوشہرہ کیپٹن (R) منصور امان نے ایس پی انوسٹی گیشن افتخار شاہ خان کی سر براہی میں DSPاظہار شاہ،SHO پبی انسپکٹر ارشاد خان پر مشتمل ٹیم تشکیل دیکر ملزم کی گرفتاری کا ٹاسک حوالہ کیا۔پولیس ٹیم نے ہر زوایہ سے کیس کی تفتیشںکی ۔اپنی پیشہ وارنہ صلاحیتوں کو برئے کار لاتے ہوئے48 گھنٹوں کے اندر ملزمان عبدالنعیم اور سلیم پسران خائستہ الرحمن تک رسائی حاصل کرتے ہوئے گرفتار کر لیا۔ملزمان نے اپنے جرم کا اعتراف کر لیا ۔ملزمان کی نشاندہی پر آلات قتل بھی برآمد کر لئے گئے ہیں۔ڈسٹرکٹ پولیس افیسر نوشہرہ کیپٹن (R) منصور امان نے کہا کہ یہ بات پورے معاشرے کیلئے لمحہ فکیہ ہے کہ قاتل خود بھی نو عمر ہیں۔اپنے بچوں کو محفوظ بنانے کیلئے پولیس سمیت ہم سب کو ملکر کام کرنا ہوگا۔سٹرکٹ پولیس افیسر نوشہرہ کیپٹن (R) منصور امان نے تفتیشی ٹیم کی کارکردگی کو سراہتے ہوئے کہا کہ خیبر پختونخواہ پولیس نے ہمیشہ مظلوم کا ساتھ دیکر ظالم کا اس کے انجام تک پہنچایا ہے اور آگے بھی یہ اس طرح جا ری رہے گا۔بچے کے رشتہ داروں ،سیاسی ،سماجی افرادسمیت نوشہرہ کے عوام نے کھلے دل سے نوشہرہ پولیس کی تعریف کی اور اُمید ظاہر کہ نوشہرہ پولیس اس طرح مجرمان کا خاتمہ کرکے نوشہرہ کو پرامن بنانے میں اپنا بھر پور رول ادا کرے گی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر