” یہ فیصلہ مولانا پر نہیں چھوڑا جا سکتا کہ ۔۔۔“

” یہ فیصلہ مولانا پر نہیں چھوڑا جا سکتا کہ ۔۔۔“
” یہ فیصلہ مولانا پر نہیں چھوڑا جا سکتا کہ ۔۔۔“

  


اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )وفاقی وزیر برائے سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے ٹویٹر پر پیغام جاری کرتے ہوئے کہا کہ پانچ رکنی کمیٹی قائم کر دی گئی ہے جوکہ اگلے دس سال کے چاند کی تاریخ کا کیلنڈرجاری کرے گی تاہم نجی ویب سائٹ کی جانب سے ٹویٹر پر فواد چوہدری سے ایک سوال کیا گیا جس پر وہ ایک مرتبہ پھر سے میدان میں آ گئے ہیں ۔

تفصیلات کے مطابق فواد چوہدری نے کچھ دیرقبل ٹویٹر پر پیغام جاری کرتے ہوئے کہا کہ پانچ رکنی کمیٹی قائم کر دی گئی ہے جس میں سپارکو ، محکمہ موسمیات اور اور سائنس و ٹیکنالوجی کے ماہرین شامل ہوں گے اور یہ کمیٹی اگلے دس سال کے چاند ، عیدین ، محرم اور رمضان سمیت دیگر اہم کیلنڈر کی تاریخ کا کیلنڈر جاری کرے گی ، اس سے ہر سال پیدا ہونیوالا تنازعہ ختم ہو گا۔

اس پر نجی ویب سائٹ کی جانب سے سوال کیا گیا کہ آپ کے خیال میں کیا اسے مولوی حضرات قبول کریں گے ؟ جس پر فواد چوہدری نے جواب جاری کرتے ہوئے کہا کہ ی”یہ فیصلہ کہ ملک کیسے چلنا ہے مولانا پر نہیں چھوڑا جا سکتا، اس رو سے پاکستان کا قیام ہی عمل میں نہ آتا کیونکہ تمام بڑے علماءتو پاکستان کے قیام کے مخالف تھے اور جناح صاحب کو کافر اعظم کہتے تھے، آگے کا سفر مولویوں نے نہیں نوجوانوں نے کرنا ہے اور ٹیکنالوجی ہی قوم کو آگے لے جا سکتی ہے۔

مزید : قومی