ہائیکورٹ کا ملازم کورونا کاشکار، ارجنٹ سیل بند، آئن لائن سماعت متاثر، پیشی فہرستیں بھی منسوخ

ہائیکورٹ کا ملازم کورونا کاشکار، ارجنٹ سیل بند، آئن لائن سماعت متاثر، پیشی ...

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہورہائی کورٹ کے ملازم میں کورونا وائرس کی تشخیص کے بعدارجنٹ سیل کو عارضی طور پربند کر دیا گیا، ارجنٹ سیل بند ہونے سے مقدمات کی آن لائن سماعت بھی متاثر ہوئی جس کے باعث چیف جسٹس لاہورہائی کورٹ مسٹر جسٹس محمد قاسم خان کی3 دن کی پیشی فہرستیں منسوخ کرنا پڑیں،معلوم ہواہے کہ لاہورہائی کورٹ کے آئی ٹی ڈیپارٹمنٹ کے ملازم متین خالد میں کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے،وہ ارجنٹ سیل میں درخواستیں اور دستاویزات سکین کرنے کے ذمہ دار تھے،کوروناوائرس مثبت آنے پر یہ شعبے فوری طور پر بند کردیئے گئے،چیف جسٹس لاہورہائی کورٹ کی عدالت میں گزشتہ ہفتے مقدمات کی آن لائن سماعت کا سلسلہ شروع ہواتھا،متعلقہ ڈیپارٹمنٹ بند ہونے کے باعث ان کی 7مئی تک کی پیشی فہرستیں منسوخ کردی گئی ہیں، گزشتہ روز ارجنٹ سیل،چیف جسٹس کی عدالت،چیف جسٹس کے چیمبر اور آئی ٹی ڈیپارٹمنٹ میں جراثیم کش سپرے بھی کیا گیا۔

ملازم کورونا

مزید :

صفحہ آخر -