پنجاب اسمبلی، 52حکومتی، 48اپوزیشن ارکان شریک ہونگے، ماسک گلوز لازمی

  پنجاب اسمبلی، 52حکومتی، 48اپوزیشن ارکان شریک ہونگے، ماسک گلوز لازمی

  

لاہور(جنرل رپورٹر) پنجاب اسمبلی کے 8 مئی بروز جمعتہ المبارک سے شروع ہونیوالے اجلاس کے سلسلہ میں بزنس ایڈوائزری کمیٹی کی میٹنگ منعقد ہوئی،جس کی صدارت ڈپٹی سپیکر سردار دوست مزاری نے کی۔ اجلاس میں وزیر قانون بشارت راجہ، ارکان اسمبلی ملک ندیم کامران، سمیع اللہ، طاہر خلیل سندھو، علی رضا گیلانی، سید علی عباس شاہ، ذیشان رفیق، سیکرٹری پنجاب اسمبلی محمد خان بھٹی اور ڈی جی پارلیمانی امور عنایت اللہ لک نے شرکت کی۔ اسمبلی اجلاس کیلئے طے شدہ طریقہ کار کے مطابق حکومت اور اپوزیشن کے زیادہ سے زیادہ 100 ارکان روزانہ اجلاس میں شریک ہوں گے، طے شدہ فارمولے کے مطابق حکومت کے 52 جبکہ اپوزیشن کے 48 ارکان اجلاس میں شریک ہوں گے۔ پارلیمانی لیڈرز اجلاس میں شرکت کرنیوالے اپنے ارکان کی فہرست پانچ مئی تک اسمبلی سیکرٹریٹ میں جمع کروائیں گے، صرف فہر ست میں شامل ارکان اسمبلی ہی پنجاب اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کر سکیں گے، کوئی رکن اپنے ساتھ سٹاف یا مہمان نہیں لاسکے گا، وزراء کو بھی صرف پرسنل سٹاف کاایک رکن ساتھ لانے کی اجازت ہوگی، تمام ارکان اسمبلی اور سٹاف ماسک اور گلوز کا استعمال کریں گے۔ میٹنگ میں اجلاس سے قبل ارکان اسمبلی کو اپنے کرونا ٹیسٹ کروانے کا بھی مشورہ دیا گیا۔ تمام ارکان اسمبلی اوراسٹاف کا جراثیم کش گیٹ سے گزر کر اسمبلی آنا لازم ہوگا، ٹمپریچر گن سے ہر رکن کا ٹمپریچر چیک کیاجائیگا، پریس گیلری کے ارکان کا داخلہ بھی محدود ہوگا۔ اجلاس کے دوران اسمبلی میں مہمانوں کے داخلے پر قطعی پابندی ہے۔

اسمبلی ایس او پیز

مزید :

صفحہ آخر -