بھارت، کورونا وباء بڑھنے کے باوجود لاک ڈاؤن میں نرمی

بھارت، کورونا وباء بڑھنے کے باوجود لاک ڈاؤن میں نرمی

  

نئی دہلی(این این آئی)آبادی کے لحاظ سے دنیا کے دوسرے بڑے ملک بھارت میں کورونا وائرس کے کیسز میں اضافے کے باوجود چارمئی سے لاک ڈاؤن کو نرم کرتے ہوئے محدود پیمانے پر ٹرینیں اوربسیں بھی چلانے کی اجازت دیدی گئی۔بھارتی ٹی وی کے مطابق چارمئی سے دارالحکومت نئی دہلی سمیت ملک کی تقریبا تمام ریاستوں میں لاک ڈاؤن کو نرم کردیا گیا۔نئی دہلی، ممبئی، پونے، بنگلورو اور چندی گڑھ سمیت کئی شہروں میں کئی غیر اہم کاروبار بھی کھول دیے گئے مگر عوام کی جانب سے سماجی فاصلے کی ہدایات پر عمل نہ کیے جانے پر پولیس ایکشن میں آئی اور درجنوں افراد کو گرفتار کرنے سمیت دکانوں کو بھی بند کروادیا۔رپورٹ میں بتایا گیا 4 مئی سے دارالحکومت نئی دہلی، ریاست مہارا شٹر، آسام، راجستھان، کرناٹکا، کیرالہ، تامل ناڈو، چھتیس گڑھ، ہماچل پردیش اور اترپردیش سمیت کئی ریاستوں میں لاک ڈان کو نرم کر تے ہوئے ٹیکسیوں کو بھی چلانے کی اجازت دیدی گئی، جس کے بعد نئی دہلی، ممبئی، بنگلورو اور پونے جیسے شہروں میں 23 مارچ کے بعد پہلی بار سرکوں پر زیادہ ٹریفک دیکھا گیا جبکہ کئی ریاستوں کے درجنوں شہروں میں بھی پہلی بار سیلون، موبائل مارکیٹس، الیکٹرانک دکانیں اور شرا ب خانے کھولے گئے۔لاک ڈان میں نرمی کے بعد کئی شہروں میں کچھ فیکٹریاں بھی کھل گئیں اور 6 ہفتوں بعد مزدور کام پر واپس آئے اور حکومت نے کئی شہروں میں پھنسے افراد کو بھی اپنے گھروں اور شہروں تک پہنچانے کیلئے ٹرین اور بسوں کو چلانے کی اجازت دیدی، تاہم حکومت نے بس اور ٹرین سروس چلانے والوں کو سخت حفاظتی انتظام کرنے کی ہدایات بھی کی ہیں۔مجموعی طور پر بھارت میں تیسری مدت کے لاک ڈان میں نرمی کرتے ہوئے ملک بھر کے علاقوں کو تین مختلف کیٹیگریز یعنی ریڈ، گرین اور اورینج زون میں تقسیم کرکے ہر زون میں مختلف کاروبار اور سرگرمیاں شروع کرنے کی اجازت دی گئی ہے۔حکومت نے 50 مہمانوں کیساتھ شادی کی تقریبات کرنے کی اجازت بھی دیدی ہے، تاہم اب بھی تعلیمی و تفریحی اداروں کو بند رکھنے سمیت مذہبی مقامات کو بھی بند رکھنے کی ہدایات کی گئی ہیں۔

بھارت لاک ڈاؤن

مزید :

صفحہ آخر -