جماعت اسلامی کے تحت یوم باب الاسلام بھر پور جوش و جذبے کے ساتھ منایا گیا

جماعت اسلامی کے تحت یوم باب الاسلام بھر پور جوش و جذبے کے ساتھ منایا گیا

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر) جماعت اسلامی سندھ کے تحت آج دس رمضان المبارک یومِ باب السلام کراچی تا کشمور جوش وجذبہ کے سااتھ منایا گیا، اس حوالے سے کورونا وائرس کی وبا کے پیش نظر حفاظتی تدابیر کو ملحوظ خاطر رکھتے ہوئے کراچی،حیدرآباد، سکھر، دادو، نوری آباد، جیکب آباد،لاڑکانہ سمیت سندھ کے چھوٹے بڑے شہروں میں منعقدہ محدود اجتماعات سے جماعت اسلامی کے مرکزی، صوبائی وضلعی قائدین کے علاوہ مختلف دینی وسیاسی رہنماؤں،علماء کرام،دانشوروں نے اپنے خطاب میں محمد بن قاسم کی سندھ آمد، راجا داہر کے مظالم اور سندھ کو باب السلام کا شرف بخشنے والے فاتح سندھ محمد بن قاسم کی شخصیت وکردار پر اظہار خیال کیا۔ صوبائی دفتر قباء آڈیٹوریم میں منعقدہ یومِ باب اسلام کی تقریب سے جماعت اسلامی سندھ کے امیر محمد حسین محنتی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ محمد بن قاسم نے ایک بیٹی کی فریاد پر لبیک کہتے ہوئے نہ صرف اسے ڈاکؤں کے چنگل سے آزاد کرایا بلکہ سندھ پر قابض ظالم حکمران راجہ داہر کے ظلم سے بھی اہلیان سندھ کو نجات دلاکر سندھ میں مثالی امن قائم کیا۔ ڈاکو راج کے خاتمے کے بعد محمد بن قاسم نے مسلم وغیر مسلم کی تفریق کے بغیر سندھ کے عوام کی خدمت اور اسلامی حکومت قائم کرکے سندھ کو باب الاسلام کا شرف بھی بخشا۔ سندھ کے عوام محمد بن قاسم کی اسلام اور انسان دوست کردار کو کبھی نہیں بھلاسکتے۔محمد بن قاسم کی مثالی حکمرانی اور انسان دوستی کا اس سے اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ جب وہ واپس جارہے تھے تو وہاں کے ہندوغیرمسلم کمیونٹی نے ان کے مجسمے بناکر ان کی پوجا کی اور اپنے مسیحا حکمران کے چلے جانے پر افسردہ تھے۔آج داہر کے پیروکاروں نے دنیا میں ظلم وجبر کی انتہا کردی ہے فلسطین سے برما اور کشمیر سے افغانستان تک کے مظلوم لوگ آج پھر کسی محمد بن قاسم کے منتظر ہیں جو آکر داہر ی کرداروں کے حامل حکمرانوں کو عبرت ناک انجام تک پہنچاکر دنیا کو امن وآتشی کا مرکز بنائے۔صوبائی نائب امیر ممتاز حسین سہتو نے سیٹھارجہ میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ رمضان شریف برکتوں،رحمتوں اور اسلامی فتوحات کا مہینہ ہے جس میں ایک بڑی فتح سندھ کی فتح ہے،جس کے نتیجے میں پورے برصغیر میں اسلام کا فروغ ہوا، 10رمضان کی بڑی برکت ہے کہ سندھ کے اندر بڑے بڑے محدث ومفسر پیدا ہوئے جنہوں نے عرب وعجم میں اسلام کی تعلیم وتدریس کی یہ ان کی تعلیم کی برکت ہے کہ سندھ میں سیکولر لادین، فرقہ پرست اورقوم پرست تحریکوں نے بڑی جدوجہد کی مگر ان کی یہاں کوئی دال نہیں گل سکی۔سندھ سگھڑ لوک ادب تنظیم (سلات) کے مرکزی صدر گل حسن گل ملک نے مبارکپور میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سندھ کے عوام بڑے عرصہ سے راجہ داہر کے ظلم کی چکی میں پس چکے تھے، ان کے ظلم کی انتہاہوچکی تھی کہ اس نے محض اقتدار کی خطار اپنے بھائی کو قتل اور اپنی ہمشیرہ سے شادی کرلی، آخرکار رب تعالیٰ کی رحمت کو جوش آیا اور دس رمضان المبارک کے دن محمد بن قاسم فاتح کی حیثیت سے سندھ میں داخل ہوئے اور راجہ داہر کو جہنم رسید کرکے سندھ کو باب الاسلام کے شرف سے سرشار کیا۔ دادو میں جماعت اسلامی سندھ کے جنرل سیکریٹری کاشف سعید شیخ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یومِ باب الاسلام تجدید عہد اور عزم نو کا دن ہے جس دن یہ سالار محمد بن قاسم نے راجہ داہر کے ظلم کا خاتمہ کرکے سندھ دھرتی کو امن وانصاف کا مرکز بنایا اس طرح ایک اسلامی ریاست میں غیر مسلموں کے حقوق کو تسلیم کیا گیا یہی وجہ ہے کہ آج تیرہ سو آٹھ سال گذرجانے کے باوجود لوگ محمد بن قاسم کو نجات دہندہ اور محسن سندھ کے طور پر یاد کرتے ہیں۔ نوری آباد میں جماعت اسلامی سندھ کے نائب امیر حافظ نصراللہ عزیز نے عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سندھ کی معیشت کے استحکام میں محمد بن قاسم کا اہم کردار ہے، کھجور کا درخت محمد بن قاسم کا سندھ کیلئے تحفہ ہے،محمد بن قاسم نے طبقاتی نظام کا خاتمہ کرکے رواداری، برابری کا نظام قائم کیا۔۔#

مزید :

صفحہ اول -