حکومت کا تعلیم کے شعبہ میں تبدیلیاں لانے کا فیصلہ‘ اقدامات شروع

  حکومت کا تعلیم کے شعبہ میں تبدیلیاں لانے کا فیصلہ‘ اقدامات شروع

  

جام پور( نامہ نگار )حکومت پنجاب نے تعلیم کے شعبہ میں تبدیلیاں لانے کا فیصلہ کردیا ہے وزارت قانون نے وزرات تعلیم کو مسودہ بھجوادیا ہے۔تفصیل کے مطابق حکومت پنجاب نے بلدیاتی نظام کے تحت عوام کے مسائل ان کی دیلز پر حل کرنے اور بلدیاتی نمائندوں کو با اختیار کرنے کے لیے ہیلتھ اور صحت سمیت دیگر محکموں میں اصلاحات لانے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس سلسلے میں ملنے والی اطلاعات کے مطابق محکمہ تعلیم میں گریڈ انیس کے افسر کو تحصیل افسر کے طور (بقیہ نمبر32صفحہ6پر)

پر لگایا جائے گا۔ جبکہ ڈپٹی ڈی ای او ان کے ماتحت کام کریں گے۔ خواتین اور مردوں کے لیے الگ الگ افسر ہو نگے جوکہ اپنے ونگ کے ذمہ دار ہو نگے۔ اسی طرح محکمہ صحت میں بھی تبدیلیاں لائی جارہی ہیں۔ تحصیل ایجوکیشن اتھارٹی ایڈمنسٹریڑ وانتظامی سربراہ تحصیل کونسل کا چیرمین ہو گا۔ بلدیاتی نمائندے نئے سکولوں کے اجراء۔ اپ گریڈیشن اور دیگر معاملات کرسکیں گے جبکہ فنڈز اور حتمی منظوری تحصیل کونسل کا چیرمین دیگا۔ دوسری طرف محکمہ تعلیم پنجاب نے گریڈ اتھارہ اور انیس۔ بیس کے افسران کو فہرستیں طلب کر لی عید الفطر کے بعد اس منصوبہ پر کام شروع ہو جائے گا۔ وزارت قانون نے بھی منصوبہ کو حتمی شکل دینے کے لیے صوبائی وزیر قانون راجہ بشارت کی زیر صدارت اجلاس گزشتہ ہفتہ کو منعقد ہو ا تھا جس میں کئی اہم فیصلہ کیے گئے۔ وزارت قانون نے بھی مبینہ طور پر ایک مسودہ سیکرٹری تعلیم پنجاب کو بھجوادیا ہے۔۔ اگلے ہفتہ کو سمری وزیر اعلی کے پاس پیش ہونے کا قوی امکاں ہے۔

اقدامات

مزید :

ملتان صفحہ آخر -