تعلیمی اداروں میں قرآن پاک ترجمے سے پڑھنے کا فیصلہ خو ش آئند

  تعلیمی اداروں میں قرآن پاک ترجمے سے پڑھنے کا فیصلہ خو ش آئند

  

لاہور(پ ر) گورنر پنجاب اور پنجاب کی جامعات کے چانسلر چوہدری سرور کا پنجاب کے تعلیمی اداروں کے لئے قرآن مجید ترجمے کے ساتھ لازمی قراردینے کافیصلہ خوش آئندہے۔ انجمن ناشران قرآن پاک اس مبارک فیصلے کا خیر مقدم کرتی ہے اور حکومت پنجاب کو یقین دلاتی ہے اس فیصلے پر عملدرآمد کے لئے ہر ممکن مدد فراہم کی جائے گی ان خیالات کا اظہار انجمن ناشران قرآن پاک کے صدر کاشف اقبال نے کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ قرآن مجید صرف کتاب ہدایت ہی نہیں بلکہ باعزت، بامقصداور کامیاب زندگی گزارنے کے لئے مکمل ضابطہ حیات بھی ہے۔قرآن مجید کا پڑھنا باعث ثواب ہے تو اس پر عمل کرنا باعث نجات ہے۔قرآن مجید عزت وکامیابی کا زینہ ہے۔آج اگر پاکستان سمیت پورا عالم اسلام مشکلات کا شکارہے تو اس کی وجہ بھی قرآن مجید سے دوری ہے۔ مسلمان جب تک قرآن مجید سے محبت اور اس کی تعلیمات پر عمل کرتے رہے دنیا پر غالب اور حکمران رہی جب مسلمانوں نے قرآن مجید کی تعلیمات پر عمل کرنا چھوڑا ذلت اور رسوائی ان کا مقدر بن گئی۔ان حالات میں گورنر پنجاب کی طرف سے پنجاب کے تمام تعلیمی اداروں کے لئے قرآن مجید ترجمہ سمیت لازمی قراردینے کا فیصلہ بہت ہی خوش آئند ہے۔ امید ہے یہ فیصلہ پاکستان کو مشکلات سے نکالنے کی بنیاد بنے گا۔ اس مبارک فیصلے پر ہم چوہدری سرور کو مبارک باد پیش کرتے ہیں اور انہیں ہر قسم کے تعاون کا یقین بھی دلاتے ہیں اور اس بات کی امید بھی کرتے ہیں کہ اس فیصلے پر عملدرآمد بھی ہوگا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -