حمزہ شہباز کیخلاف اثاثہ جات کیس کی سماعت 12 مئی تک ملتوی

حمزہ شہباز کیخلاف اثاثہ جات کیس کی سماعت 12 مئی تک ملتوی

  

لاہور(نامہ نگار)احتساب عدالت نے حمزہ شہباز کے خلاف آمدنی سے زائد اثاثہ جات اور منی لانڈرنگ کیس کی سماعت 12 مئی تک ملتوی کردی، عدالت نے نیب کو آمدنی سے زائد اثاثہ جات کیس کا ریفرنس جلد دائر کرنے کا حکم دے دیاہے،احتساب عدالت کے جج جواد الحسن نے آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں حمزہ شہباز کے خلاف درخواست پر سماعت کی کرونا وائرس کے پیش نظر حمزہ شہباز کو عدالت میں پیش نہ کیا جا سکا نیب پراسیکیوٹر نے عدالت کو آگاہ کیا کہ حمزہ شہباز پر ذاتی ملازمین کے ذریعے منی لانڈرنگ کرنے کا الزام ہیحمزہ شہباز کے وعدہ معاف گواہ بیان قلمبند کروا چکے ہیں جبکہ حمزہ شہباز کے وکیل نے عدالت میں موقف اختیار کر رکھا ہے کہ سیاسی خاندان سے تعلق ہونے پر سیاسی انتقام کا نشانہ بنایا جا رہا ہے، حمزہ شہباز کو 190 سے زائد دنوں سے گرفتار کیا گیا مگر ابھی تک کوئی ریفرنس دائر نہیں کیا گیا، نیب نے منی لانڈرنگ کی تحقیقات شروع کرتے ہوئے نیب آرڈیننس کی دفعہ 18 کو پس پشت ڈالا گیا ہے۔

2005 ء سے 2008ء حمزہ شہباز پبلک آفس ہولڈر نہیں رہے جبکہ بیرون ملک سے وصول رقم 14 سال پرانی ہے جس کا صرف محدود ریکارڈ موجود ہے،عدالت نے دلائل سننے کے بعد منی لانڈرنگ کیس کی سماعت بھی 12 مئی تک ملتوی کردی۔

مزید :

علاقائی -