امریکا،ایک ماہ میں پہلی بار یومیہ ہلاکتوں کی تعداد میں کمی لیکن یکم جون تک کیا ہوسکتا ہے؟ پریشان کن خبر

امریکا،ایک ماہ میں پہلی بار یومیہ ہلاکتوں کی تعداد میں کمی لیکن یکم جون تک ...
امریکا،ایک ماہ میں پہلی بار یومیہ ہلاکتوں کی تعداد میں کمی لیکن یکم جون تک کیا ہوسکتا ہے؟ پریشان کن خبر

  

واشنگٹن(ڈیلی پاکستان آن لائن)دنیا بھر میں کوروناوائرس سے سب سے زیادہ متاثرہ ملک امریکا میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران  ہلاکتوں کے جو اعدادوشمار سامنے آئے ہیں وہ گزشتہ ایک ماہ میں سب سے کم ہیں۔ لیکن امریکا میں بیماریوں پر کنٹرول اور ان سے بچاو کے ادارے نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ وہاں یکم جون تک روزانہ ہلاکتوں کی تعداد سترہ سو پچاس سے بڑھ کر تین ہزار یومیہ ہوسکتی ہے۔

برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی کے مطابق امریکہ میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کووڈ 19 سے مزید 1015 اموات ہوئیں جو ایک مہینے میں یومیہ ہلاکتوں کی سب سے کم تعداد ہے۔ مجموعی طور پر اس وائرس سے اب تک 69ہزار افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

نیویارک ٹائمز کے مطابق امریکہ میں بیماریوں پر کنٹرول اور ان سے بچاؤ کے ادارے، سی ڈی ایس کے ایک اندرونی میمو کے مطابق امریکہ میں یکم جون تک روزانہ کی بنیاد پر ہلاکتوں کی تعداد 1750 سے بڑھ کر 3000 کے قریب ہونے کا خدشہ ہے۔

اس سے قبل امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ امریکا میں کورونا وائرس سے ایک لاکھ افراد ہلاک ہوسکتے ہیں۔ جانز ہاپکنز یونیوسٹی کے ڈیٹا کے مطابق، اب تک وائرس سے 69 ہزار امریکی ہلاک ہو چکے ہیں۔

ورچوئل ٹاؤن ہال میں بات کرتے ہوئے، صدر ٹرمپ کا کہنا تھا کہ ہم 75 ہزار، 80 ہزار سے لے ایک لاکھ تک ہلاکتیں دیکھ سکتے ہیں۔ یہ ہولناک بات ہے۔ وائرس سے ایک بھی موت نہیں ہونی چاہئیے۔ اسے چین ہی میں روک لیا جانا چاہئیے تھا۔

تاہم انہوں نے ملک کی معیشت کو دوبارہ چالو کرنے کی فوری ضرورت پر بات کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں معیشت کو محفوظ بناتے ہوئے مگر جتنا جلد ہو سکے بحال کرنا ہے۔

مزید :

کورونا وائرس -