لاک ڈاون میں نرمی،شراب کے رسیا میخانے پہنچے تو حکومت نے کیسے سبق سکھایا؟ ہمسائیہ ملک سے خبر آگئی

لاک ڈاون میں نرمی،شراب کے رسیا میخانے پہنچے تو حکومت نے کیسے سبق سکھایا؟ ...
لاک ڈاون میں نرمی،شراب کے رسیا میخانے پہنچے تو حکومت نے کیسے سبق سکھایا؟ ہمسائیہ ملک سے خبر آگئی

  

نئی دہلی(ڈیلی پاکستان آن لائن)کورونا وائرس کے دوران لگے لاک ڈاون میں نرمی ہوئی تو شراب کے رسیا بھارتی شہریوں نے شراب خانوں پر دھاوا بول دیا۔ گزشتہ روز شراب خانوں پر لوگوں کی اس قدر بھیڑ ہوگئی کہ پہلے تو لوگوں کو منتشر کرنے کیلئے پولیس کو بلانا پڑگیا جبکہ اس کے بعد وہاں شراب پرستر فیصد کورونا ٹیکس نافذ کردیاگیاہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے رائٹرز کی رپورٹ کے مطابق یہ ٹیکس حکام کی جانب سے کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو کم کرنے کے لیے لگائے گئے 6 ہفتوں کے لاک ڈاؤن میں نرمی کے بعد شراب خانوں پر لوگوں کے رش کو کم کرنے کے لیے عائد کیا گیا۔

واضح رہے کہ شراب پر ٹیکس بھارت کی کل 36 ریاستوں اور وفاقی اکائیوں کی آمدنی میں کلیدی کردار ادا کرتا ہے جن میں سے زیادہ تر اس وائرس کی وجہ سے ہونے والی معاشی سرگرمیوں میں رکاوٹ سے فنڈز کی کمی کا شکار ہیں۔

بھارتی میں پیداہونے والی صورتحال پر سوشل میڈیا صارفین کا کہنا تھا کہ حکومت کو چاہیے کہ وہ شراب کی ہوم ڈلیوری کی سہولت فراہم کرے۔

خیال رہے کہ کورونا وائرس کے پھیلاو میں کمی سامنے آنے کے بعد دنیا کے مختلف ممالک میں لاک ڈاون میں نرمی کی گئی ہے جن میں بھارت بھی ایک ہے تاہم کسی بھی دوسرے ملک میں لاک ڈاون میں نرمی کے بعد ایسی صورتحال سامنے نہیں آئی جیسی بھارت میں دیکھنے کو ملی ہے۔

اس وقت جرمنی، اٹلی ، سپین ، امریکا، بیلجیم اور نائیجیریا سمیت متعدد ممالک میں حکومتوں نے لاک ڈاون میں مرحلہ وار نرمی کی ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -کورونا وائرس -