LUMSیونیورسٹی نے اپنی فیس میں ایک جھٹکے میں ہی ہوشربا اضافہ کردیا، طالب علموں کی چیخیں نکل گئیں

LUMSیونیورسٹی نے اپنی فیس میں ایک جھٹکے میں ہی ہوشربا اضافہ کردیا، طالب علموں ...
LUMSیونیورسٹی نے اپنی فیس میں ایک جھٹکے میں ہی ہوشربا اضافہ کردیا، طالب علموں کی چیخیں نکل گئیں

  

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) لاہور یونیورسٹی آف مینجمنٹ سائنسز (لمز) نے ایک ہی جھٹکے میں فیس میں ایسا ہوشربا اضافہ کر دیا ہے کہ طالب علموں کی چیخیں نکل گئیں۔ ویب سائٹ ’پروپاکستانی‘کے مطابق یونیورسٹی نے طالب علموں کو مطلع کیے بغیر آئندہ سمیسٹرکے لیے فیس میں 41فیصد اضافہ کر دیا ہے۔ یونیورسٹی انتظامیہ نے کریڈٹ آور سسٹم کا ایسا ناجائز فائدہ اٹھایا ہے کہ طالب علم سمجھ ہی نہیں پائے کہ ان کے ساتھ کیا ہاتھ ہو گیا ہے۔

بظاہر انتظامیہ نے بتایا ہے کہ وہ فیس میں فی کریڈٹ آور 13فیصد اضافہ کر رہے ہیں لیکن کریڈٹ آورز کی تعداد کے تناسب سے اس اضافے کو دیکھا جائے تو یہ 41.7فیصد بنتا ہے۔ رپورٹ کے مطابق 20کریڈٹ آور کی سابقہ فیس 3لاکھ 40ہزار 200روپے تھی، جسے کریڈٹ آورز کی تعداد پر تقسیم کریں تو فی کریڈٹ آور 17ہزار 10روپے بنتی ہے۔ فی کریڈٹ آور 13فیصد اضافے سے اب یہ 19ہزار 221.3روپے بن گئی ہے۔ اس تناسب سے 20کریڈٹ آورز کی اضافہ شدہ فیس 3لاکھ 84ہزار 426روپے ہونی چاہیے لیکن یونیورسٹی انتظامیہ کی طرف سے یہ 4لاکھ 82ہزار روپے اعلان کی گئی ہے۔ انتظامیہ نے یہ اضافہ ایسے طریقے سے کیا ہے کہ کچھ سینئرز کو ریلیف ملے گا لیکن طلبہ کی اکثریت پر یہ اضافہ لاگو ہو گا۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -