کورونا وائرس مریض کے ساتھ ڈاکٹر کی جنسی زیادتی

کورونا وائرس مریض کے ساتھ ڈاکٹر کی جنسی زیادتی
کورونا وائرس مریض کے ساتھ ڈاکٹر کی جنسی زیادتی

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت میں ڈاکٹر نے ہسپتال میں کورونا وائرس کے مریض کو بدفعلی کا نشانہ بنا ڈالا۔ ٹائمز آف انڈیا کے مطابق یہ انسانیت سوز واردات ممبئی کے ووک ہارڈٹ ہسپتال میں یکم مئی کو ہوئی۔ حیران کن طور پر جس روز اس 44سالہ مریض کو اس ہسپتال لایا گیا تھا اسی روز اس ڈاکٹر نے اس ہسپتال میں نوکری جوائن کی تھی اور پہلے ہی دن اس مریض کے ساتھ بدفعلی کر ڈالی۔

رپورٹ کے مطابق ہسپتال کی انتظامیہ نے 60سال سے زائد عمر کے ڈاکٹروں کو کورونا وائرس کی وجہ سے چھٹی پر بھیج دیا تھا اور ان کی جگہ نئے ڈاکٹروں کو عارضی طور پر بھرتی کر لیا تھا۔ یہ ڈاکٹر بھی نئے آنے والوں میں سے تھا جو مبینہ طور پر مریض کے کمرے میں گیا اور یہ شیطانی حرکت کر ڈالی۔ مریض نے بعد ازاں طبی عملے کو اس حوالے سے آگاہ کیا جس پر ہسپتال انتظامیہ نے معاملہ ممبئی پولیس کے سپرد کر دیا۔ پولیس نے ڈاکٹر کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ہے تاہم اسے گرفتار نہیں کیا گیا کیونکہ وہ کورونا وائرس کے مریضوں کا علاج کرتا رہا ہے اور امکان ہے کہ وہ بھی متاثرہو چکا ہو، چنانچہ پولیس نے اسے گھر میں ہی قرنطینہ کا پابند کر دیا ہے اورقرنطینہ کی مدت پوری ہونے کے بعد اسے حراست میں لیا جائے گا۔

مزید :

بین الاقوامی -