وزیر اعظم سمیت وفاقی کابینہ نے کتنے پیسے کورونا ریلیف فنڈ میں دینے کا اعلان کردیا؟  وہ خبر آگئی جو بہت پہلے ہی آجانی چاہیے تھی

وزیر اعظم سمیت وفاقی کابینہ نے کتنے پیسے کورونا ریلیف فنڈ میں دینے کا اعلان ...
وزیر اعظم سمیت وفاقی کابینہ نے کتنے پیسے کورونا ریلیف فنڈ میں دینے کا اعلان کردیا؟  وہ خبر آگئی جو بہت پہلے ہی آجانی چاہیے تھی

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) وفاقی کابینہ نے لاک ڈاؤن میں نرمی کی منظوری دے دی، وزیر اعظم سمیت وفاقی کابینہ کے تمام ارکان نے اپنی ایک ایک ماہ کی تنخواہ کورونا ریلیف فنڈ میں جمع کرانے کا بھی اعلان کردیا۔

وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا جس میں وزیر اعظم سمیت تمام وزرا، مشیروں اور معاونین خصوصی نے اپنی ایک ایک مہینے کی تنخواہ وزیر اعظم کورونا ریلیف فنڈ میں دینے کا فیصلہ کیا۔

نجی ٹی وی اے آر وائی نیوز کے مطابق وفاقی کابینہ نے ملک میں لاک ڈاؤن میں نرمی کی منظوری بھی دے دی۔ دوسری جانب نجی ٹی وی جیو نیوز نے ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ لاک ڈاؤن میں نرمی کے حوالے سے مشاورت مکمل کرلی گئی ہے ، حتمی منظوری بدھ کو دی جائے گی۔ اجلاس میں کابینہ کے ارکان کی اکثریت نے لاک ڈاؤن کے حوالے سے وزیراعظم کے مؤقف سے اتفاق کیا جبکہ وزیراعظم کا کہنا تھاکہ چاہتا ہوں لاک ڈاؤن جلد ختم ہو تاہم احتیاطی تدابیر پر سختی سے عمل کرنا ہوگا، کاروبارتو کھل جائیں گے لیکن طے کردہ ضابطہ کار پر عملدرآمد بھی کرانا ہوگا۔

وفاقی کابینہ نے واپڈا ممبرفنانس کی تعیناتی میں توسیع اور پائیدار ترقی اہداف پروگرام کی کابینہ ڈویژن سےمنتقلی کی منظوری دی اور کابینہ کمیٹی برائےقانون سازی اجلاس میں کئےگئے فیصلوں کی توثیق بھی کردی۔

جیو نیوز کے مطابق وفاقی کابینہ نے ٹرین سروس بحال کرنے  اور ٹرانسپورٹ چلانے کا بھی عندیہ دیا لیکن اس کی حتمی منظوری بدھ کو نیشنل کمانڈ آپریشن سنٹر کے اجلاس میں دی جائے گی۔

وفاقی کابینہ کے اجلاس میں بھارت سے 429 ضروری ادویات کی خریداری کی بھی تجویز پیش کی گئی جو مسترد کردی گئی۔ وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے اس تجویز کی مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ بھارت کشمیریوں پر مظالم ڈھا رہا ہے اس لیے ایسے ملک کے ساتھ تجارت نہیں ہوسکتی۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -