شہبازشریف،فیملی کیخلاف منی لانڈرنگ ریفرنس، نیب گواہان طلب 

شہبازشریف،فیملی کیخلاف منی لانڈرنگ ریفرنس، نیب گواہان طلب 

  

لاہور(نامہ نگار)احتساب عدالت نے قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر میاں شہباز شریف سمیت ان کے خاندان کے افراد کے خلاف منی لانڈرنگ ریفرنس میں نیب کے گواہوں کو 18 مئی کو طلب کر لیا  حمزہ شہباز نے عدالت میں پیشی کے موقع پراس مقدمہ میں شریک ملزمان کو جلد ضمانت پر رہا ئی کے لئے وکیل کو ذمہ داری سونپنے کی نویدسنائی اور شریک ملزمان کو صبر اور حوصلہ کی بھی تلقین کی،احتساب عدالت میں نئے ججوں کا تقرر نہ ہونے کی وجہ سے میاں شہباز شریف اور ان کی فیملی کے ارکان کے خلاف ریفرنس پر کوئی پیش رفت نہیں ہوسکی گزشتہ روزاحتساب عدالت کے ڈیوٹی جج شیخ سجاد کے روبرو ریفرنس سماعت کے لئے پیش کیا گیا تو حمزہ شہباز عدالت میں پیش ہوئے، وکلا نے میاں شہباز شریف کی طرف سے درخواست دائر کی جس میں استدعا کی گئی کہ کورونا کی وجہ سے میاں شہباز شریف کو پیشی سے ایک روزہ حاضری سے استثنیٰ دیا جائے شہباز شریف کینسر کے مریض ہیں جس کے باعث وہ باہر نکلنے سے اجتناب کررہے ہیں، عدالت نے وکلاء کی یہ استدعا منظور کرتے ہوئے شہبازشریف کوایک دن کی حاضری معافی دیدی اورگواہوں کو آئندہ سماعت پر دوبارہ پیش ہونے کی ہدایت کرتے ہوئے سماعت ملتوی کردی  دریں اثناء کمرہ عدالت میں حمزہ شہباز نے منی لانڈرنگ ریفرنس میں نامزد زیر حراست شریک چار ملزمان سے ملاقات کی دوسری جانب احتساب عدالت نے سابق وزیراعلیٰ پنجاب  شہباز شریف کے ساتھ منی لانڈرنگ ریفرنس میں شریک ملزم نثار احمد کی رہائی کی روبکار جاری کردی، احتساب عدالت کے ایڈمن جج شیخ سجاد احمد نے روبکار جاری کردی عدالت نے ضمانتی مچلکے منظور ہونے کے بعد ملزم کی رہائی کی روبکار جاری کرنے کاحکم دیا۔

ہے،ملزم نثار احمد کی عدالت عالیہ نے درخواست ضمانت منظور کررکھی ہے۔

مزید :

علاقائی -