9ماہ کا بچہ اغواء، والدہ کو غشی کے دورے  بھابی کیخلاف تھانے میں درخواست

9ماہ کا بچہ اغواء، والدہ کو غشی کے دورے  بھابی کیخلاف تھانے میں درخواست

  

 چوک سرورشہید(نامہ نگار)بے اولاد بھابھی نے نند سے بچہ مانگا  نہ دینے پر 9 ماہ کے بچے کو اغواء کرکے لے گئی۔  (بقیہ نمبر22صفحہ6پر)

تفصیل کے مطابق چوک سرورشہید کے نواحی گاؤں چک نمبر630/TDA کی رہائشی خاتون ساجدہ بی بی نے تھانہ سرورشہید میں تحریری درخواست دینے کے بعد اپنی والدہ کے ہمراہ پریس کانفرنس میں بتایا کہ اسکے چاربچے دو بیٹے اور دو بیٹاں ہیں۔ سب سے چھوٹے بچے حسن علی کی عمر 9 ماہ ہے۔اس کا بھائی سلیمان اور بھابھی عظمیٰ بی بی بے اولاد ہیں اور ڈسکہ سیالکوٹ میں رہائش پذیر ہے ان لوگوں نے کئی بار مجھے کہا کہ تم اپنا آخری بیٹا ہمیں دے د و ہم لے پالک کے طور پر اسے پال لیں گے۔لیکن میں نے اپنے جگر گوشہ کو اسے دینے سے انکار کردیا گزشتہ دو روز قبل وہ ڈسکہ سے ہمارے پاس ہمارے گھر آئے۔ گزشتہ روز شام 5 بجے کے قریب وہ اپنے کام کاج میں مصروف تھی کہ میری بھابھی عظمیٰ بی بی اس دوران میں میرے چوری میرے گھر سے میرے 9 ماہ کے بچے حسن علی کو اٹھا کر بھاگ گئی اور چوک سرورشہید سے سیالکوٹ جانے والی بس میں شام 7 بجے سوار ہوکر چلی گئی۔میرا بچہ میرے بغیر زندہ نہیں رہ سکتا میں نے تھانہ میں بھی درخواست دی ہے اور ڈی پی او مظفرگڑھ سے بھی مطالبہ کرتی ہوں کہ میرے مغوی بچے کو فوری طور پر بازیاب کرایا جائے۔میرا بھائی ادھرسلیمان ادھر ہی موجود ہے اسے حراست میں لیکر فوری کارروائی عمل میں لائی جائے۔

اغواء

مزید :

ملتان صفحہ آخر -