ملزمان کی ضمانتیں،کچہری میں رش، ٹاؤٹ سب سے زیادہ متحرک

ملزمان کی ضمانتیں،کچہری میں رش، ٹاؤٹ سب سے زیادہ متحرک

  

 ملتان (  خصو صی رپورٹر  )  ضلع کچہری ملتان میں عید الفطر کی آمد پر ملزمان کی ضمانتوں کے لیے رش بڑھ گیا۔ ضمانت کے حصول کے لیے آئے ملزمان کے لواحقین (بقیہ نمبر34صفحہ6پر)

مبینہ طور پر ٹاٹ مافیا کے ہاتھوں لٹنے پر مجبور ہیں۔متحرک ہونیوالے ٹاوٹوں نے پکے اور کچے مچلکوں کے ریٹس میں بھی اضافہ کردیا ہے۔تفصیل کے مطابق عیدالفطر کے نزدیک آتے ہی ضلع کچہری ملتان میں ٹاوٹ مافیا ایک بار پھر سے سر اٹھا چکا ہے۔ سرگرم ٹاٹوں نے ضمانتوں کے حصول کے لیے آئے ملزمان کے ورثا سے مرضی کے ریٹ وصول کرنا شروع کردیے ہیں۔ عبوری ضمانتوں کے لیے کچے مچلکے اور بعد از گرفتاری کی ضمانتوں پر جمع کرائے جانے والے پکے مچلکوں کے علیحدہ اور بھاری ریٹ مقرر ہوگئے ہیں۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ 30 ہزار کا ضمانتی مچلکہ 3 سے 5 ہزار، 50 ہزار کا ضمانتی مچلکہ 6 سے 10 ہزار اور ایک لاکھ کا ضمانتی مچلکہ 15 سے 25 ہزار روپے میں فراہم کیا جارہا ہے۔یہاں تک کہ ضمانت کی درخواستوں پر لگنے والے چھوٹے اشٹام کچہری سے غائب ہیں جبکہ ایک روپے اور دو روپے والی ٹکٹس بھی نایاب ہیں۔ فوٹو اسٹیٹ والوں نے مختلف فارمز، کاپیوں اور فائلوں کے نرخوں میں بھی من مانا اضافہ کرکے عید کمائی شروع کررکھی ہے۔ عدلیہ کی جانب سے بھی ٹاٹ مافیا اور جعلی مچلکوں کی روک تھام کے لیے اقدامات کرتے ہوئے سخت ہدایات جاری کی گئی ہیں اور مچلکوں کا کمپیوٹرائزڈ ریکارڈ رکھنے کے ساتھ فرد ملکیت کی محکمہ مال سے تصدیق بھی کرائی جا رہی ہے۔کچہری آنے والے ہزاروں سائلین مشکلات سے دوچار ہے۔ 

متحرک

مزید :

ملتان صفحہ آخر -