کورونا وباء‘ پشاور شہر میں چائلڈ لیبر میں خطرناک حد تک اضافہ

    کورونا وباء‘ پشاور شہر میں چائلڈ لیبر میں خطرناک حد تک اضافہ

  

پشاور (سٹی رپورٹر) پشاور میں کورونا وباء کی تیسری لہر میں اضافہ کے باجود شہر میں چائلڈ لیبر میں خطرناک حد تک اضافہ جبکہ مشقت کرنیوالے بچے کورونا سے بچاو کے ایس او پیز کا بھی خیا ل نہیں کرتے جسکی وجہ سے انکا کورونا وائرس سے متاثر ہونے کا خدشہ بڑھ چکا ہے جبکہ چائلڈ لیبر کے خلاف کام کرنیوالے تنظیمیں بھی چھپ سادھ لئے ہے اور حکومتی سطح پر بھی چائلڈ لیبر کے روک تھام کے حوالے سے اقدامات نہیں اٹھائے جا رہے  ہوٹلوں،ورکشاپس،پبلک ٹرانسپورٹ اور دیگر کاروباری جگہوں پر معصوم بچے مشقت کرتے نظر اتے ہے جو معاشرے کا عالمیہ ہے کام کرنیوالے بچے جہاں اپنا پچپن مزدوری کے نظر کر دیتے ہیں وہی وہ تعلیم سے بھی محروم ہو جتے ہے جبکہ موجودہ حالات میں معاشی ھالات خراب ہونے کے باعث چائلڈ لیبر میں مزید اضافہ دیکھنے کو مل رہا ہے جبکہ مشقت کرنیوالے بچے کورونا سے ایس او پیز کا بھی خیال نہیں رکھتے خصوصی طور پر پبلک ٹرانسپورٹ میں کنڈیکٹر کا کم کرنیوالے بچے زیادہ کورونا کا شکار ہو سکتے ہیں تاہم حکومت اس حوالے سے چشم پوشی اختیار کی ہوئے ہے اور غیر سرکاری تنظیمیں جو چائلڈ لیبر کے خلاف کرتی ہے وہ بھی برائے نام ہو کے رہہ گئی ہے حکومت اگر  سنجیدگی کا مظاہرہ کریں تو موثر اقدامات اٹھا کر اس مسلے کو کسی حد تک حل کر سکتے ہیں  

مزید :

پشاورصفحہ آخر -