عبادات کو پورے سال کیلئے مختص کیا جائے،مولانا عبیدالرحمن 

  عبادات کو پورے سال کیلئے مختص کیا جائے،مولانا عبیدالرحمن 

  

کراچی(پ ر)بروج انسٹی ٹیوٹ بلوچ کالونی کیمپس کراچی کے زیر اہتمام معھد السلفیہ للتعلیم والتربیہ گلستان جوہر کراچی کے استاد مولانا عبید الرحمٰن نے افطار ڈنر کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جن عبادات نے آپ کو متقی اور پرہیز گار بنادیا ہے ان عبادات کو سال کے تیس دن نہیں بلکہ سال کے 365دنوں کے لیئے مختص کرلیں کیونکہ قرآن مجید کی ہر ہر آیت پر مکمل ایمان رکھنے والا شخص دینی اور دنیاوی کامیابیوں سے ہم کنار ہوجایا کرتا ہے انہوں نے کہا کہ اس کے برعکس وہ انسان جو رب تعالیٰ کی آیات سے اعراض کرتا ہے تو اللہ تعالیٰ اس کی معیشت تنگ کردیتے ہیں۔ مولانا عبید الرحمٰن نے کہا کہ اللہ تعالیٰ اس ماہِ مبارک میں ہر صبح اور ہر رات کو جہنم کی آزادی کے پروانے جاری کرتے ہیں اور یہ ہماری کتنی بڑی خوش نصیبی ہے کہ رب تعالیٰ کے فرشتے بھی متقی اور پرہیز گار بندگان خدا کے لئے بخشش و مغفرت کی دعا کرتے ہیں انہوں نے کہا کہ اس ماہ مبارک کے چوبیس گھنٹوں میں (۱) افطاری کے وقت (۲) سحری کے وقت اور (۳) نماز فجر سے نماز اشراق تک ایسے قیمتی اوقات ہیں جن میں آپ اللہ تعالیٰ سے رحمت و مغفرت اور بخشش کی دعائیں مانگیں تو رب تعالیٰ ایسے نفوسِ قدسیہ کو اپنی رحمتوں کے سائے میں ڈھانپ لیا کرتے ہیں ہمیں چاہیے کہ جہنم سے آزادی حاصل کرنے کے لئے ماہِ صیام کے آخری عشرہ میں مکمل طور پر کمر بستہ ہوجائیں اور اس کے ایک ایک لمحہ سے فیضیاب ہو کر اپنی عارضی زندگی کو کامیا ب بنانے والے بن جائیں۔ 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -