موٹروے پولیس کا انوکھا انصاف، کورونا کے شکار سب انسپکٹر کی دوران بیماری غیر حاضریاں لگتی رہیں،وفات کے بعد افسران نے نوٹس لے لیا

موٹروے پولیس کا انوکھا انصاف، کورونا کے شکار سب انسپکٹر کی دوران بیماری غیر ...
موٹروے پولیس کا انوکھا انصاف، کورونا کے شکار سب انسپکٹر کی دوران بیماری غیر حاضریاں لگتی رہیں،وفات کے بعد افسران نے نوٹس لے لیا

  

لاہور(محمد عمیر)موٹروے پولیس کی ستم ظریفی، اہلکار کورنا کے باعث ہسپتال میں داخل ہونے کے بعد اس کی غیر حاضریاں لگتی رہیں،اہلکار کے دم توڑنے کے بعد محکمہ کو واقعہ کی انکوائری یاد آگئی۔ڈی آئی جی موٹروے وصال ظفر سلطان نے واقعہ کی انکوائری کے  احکامات جاری کردئیے۔تفصیلات کے مطابق موٹروے پولیس کا اہلکار سب انسپکٹر شوکت محمود دمے کا مریض تھا،کورونا کے باعث اس نے اپنا ٹرانسفر فیلڈ کی بجائے کسی دفتر میں کروانے کی درخواست کی جو کہ قبول نہ ہوئی،اس دوران وہ کورونا کا شکار ہوگیا تو ایڈمن آفیسر کے حکم پر اس کی غیر حاضریاں لگنا شروع ہوگئیں جبکہ اہلکار کو ہسپتال میں آکسیجن لگی ہوئی تھی۔ہسپتال جاکر خیریت دریافت کرنے کی بجائے غیر حاضریوں کےساتھ ہی ڈی آئی جی موٹروے وصال ظفر سلطان کے حکم پر اس کا تبادلہ لاہور میں کردیا گیا۔

موت سے چند گھنٹے قبل اس نے ایک وائس میسج اپنے افسران کے نام بھیجا کہ کس طرح سے محکمے کے افسران نے اس سے زیادتی کی ہے۔وائس میسج میں اہلکار کا کہنا تھا کہ اسے آکسیجن لگی ہوئی ہے اور معلوم ہوا کہ ہے ایڈمن آفیسر اس کی غیر حاضریاں لگارہا ہے۔اس دوران اہلکار کی موت ہوگئی  اور وائس میسج سامنے آنے پر ڈی آئی جی موٹروے وصال فخر سلطان نے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے 24 گھنٹوں میں واقعہ کی انکوائری رپورٹ طلب کرلی ہے۔

مزید :

قومی -